19 ذوالحجۃ الحرام, 1441 ہجری

: : :
(PST)

ایک ایسے وقت میں جب ایک وبائی مرض کورونا نے دنیا کو اپنی لپیٹ میں لے رکھا ہے اور اس سے متاثر ہونے سے بچنے کا واحد حل قوت مدافعت کو بڑھانا ہے، تحقیق کے مطابق روز مرہ زندگی میں نمک کا زیادہ استعمال انسانی جسم کی قوت مدافعت کو کمزور کرتا ہے۔ قوت مدافعت کی کمزوری کے سبب انسانی جسم حملہ آور وائرس اور بیکٹریا کے خلاف مذاحمت میں کمزور ہوتا ہے۔ محققین کے مطابق اپنی خوراک میں روزانہ 5 گرام سے زیادہ نمک استعمال کرنے والوں کا قوت مدافعت 5 گرام سے کم استعمال کرنے والوں کے مقابلے میں کمزور ہوتا ہے۔ بیشتر افراد اس سے زیادہ مقدار میں نمک روزمرہ کی بنیادوں پر جزو بدن بنالیتے ہیں جس سے انسان کا قوت مدفعت سسٹم متاثر ہوتا ہے۔ محققین نے دریافت کیا کہ روزانہ صرف 11 گرام نمک یا 2 بار فاسٹ فوڈ کا استعمال ایک ہفتے میں مدافعتی خلیات کو کمزور کرنے کے لیے کافی ہوتا ہے۔ نمک کا زیادہ استعمال انسانی جسم کے مدافعتی نظام کے ایک حصے کو کمزور کرتا ہے جس سے انسان کمزوری اور سستی محسوس کرتا ہے۔ سوڈیم  کلورائیڈ سے انسانی مدافعتی نظام پر منفی اثرات مرتب ہوتے ہیں اور دوسری جانب عالمی ادارہ صحت کی جانب سے بھی جاری سفارشات بھی ہمیں یہ ہی بتاتی ہیں کہ ایک دن میں انسانی جسم کو ایک ٹی اسپون نمک کی مقدار استعمال کرنی چاہئے نمک کی مقدار میں کمی کر کے ہم ایک صحت مند زندگی اپنا کر بہتر اور مضبوط قوت مدافعت کے ساتھ مختلف اقسام کی بیماریوں سے لڑنے کی طاقت لیے ہم زیست کا ہر لمحہ بھرپور اور صحت مند طرز سے گزار سکتے ہیں۔