10 اپریل 2021ء کی شب عالمی مدنی مرکز فیضان مدینہ کراچی سے بذریعہ مدنی چینل براہ راست مدنی مذاکرے کا انعقاد کیاگیاجس میں بیشتر مقامات پر ہزاروں عاشقان رسول نے شرکت کی۔

امیر اہل سنت علامہ محمد الیاس عطار قادری دَامَتْ بَرَکَاتُہُمُ الْعَالِیَہ نے مدنی مذاکرے میں کئے گئے سوال ”بندے کو تکلیف یا پریشانی آئے تو اس کا اندازکیا ہونا چاہئے؟“ کا جواب دیتے ہوئے ارشاد فرمایا کہ بندےکوچاہیئے کہ پریشانی سے نہ گھبرائے ،دل بڑارکھے۔کچھ نہ کچھ پریشانیاں آتی رہتی ہیں ،اس لیے ان پرصبرکرے، پریشانی آنے سے تو بندہ اللہ پاک کا ذکرکرتاہے، اُسے یاد کرتاہے ،اِس سے غروربھی دُورہوتاہے۔ جوشخص ہنس مکھ،شکوہ شکایت نہ کرنے والاہوتاہے لوگ بھی اُس سے محبت کرتے ہیں ۔

سوال : کیاجھوٹ بولنے اوربہانہ بنانےمیں فرق ہے؟

جواب :جی ہاں فر ق ہے ،ایک تو بہانہ جھوٹ پر مشتمل ہوتاہےاوریہ گناہ ہے،بعض اوقات بہانہ سبب کے معنی میں ہوتاہے ۔ جیسے فارسی شعرہے :

رَحْمتِ حق’’ بہا‘‘ نہ می جوید

رَحْمتِ حق ’’ بہا نہ‘‘ می جوید

یعنی اللہ پاک کی رَحمت ’’ بہا ‘‘ یعنی قیمت نہیں مانگتی ۔اللہ پاک  کی رَحْمت تو ’’بہانہ ‘‘ڈھونڈتی ہے۔

سوال : مسلمانوں کے ساتھ کیساسلوک کرناچاہئے ؟

جواب: ہرمسلمان کے ساتھ ہمدردی اورپیاربھراسلوک کرنا چاہئے، کسی کا دل نہیں دکھاناچاہئے ۔

سوال: اولادکارویہ اپنے ماں باپ کے ساتھ کیساہو ؟

جواب: اولادکو اپنے ماں باپ کی فرمانبرداری ہی کرنی ہے ،ان کے سامنےآوازبلند نہ کی جائے،کوئی ایساکام نہ کیا جائے جس سےانہیں تکلیف پہنچے۔ ماں باپ کا دل دُکھانے والااس دنیامیں بھی ذلیل وخوارہوتاہے اورآخرت میں عذاب ِنارکا حق دارہوتاہے۔ماں کے قدموں تلےجنت ہے،ایک حدیث پاک میں ہے کہ جنت والدین کے قدموں تلےہے،ایک اورحدیث میں ہے کہ باپ کی رضا اللہ پاک کی رضا اورباپ کی ناراضی اللہ کی ناراضی ہے۔

سوال: ماہِ رمضان میں مہنگائی بڑھ جاتی ہے، آپ تاجروں کو کیافرماتے ہیں ؟

جواب: دِین خیرخواہی وبھلائی کا نام ہے ،ساراسال مسلمان کےساتھ ہمدردی کریں،تاجروں کو چاہئے کہ سب کوسستابیچیں ،اس سےآپ کی عزت بڑھےگی،گاہک بھی زیادہ ہوں گے ،آپ کا کاروبار بھی ترقی کرےگا۔

سوال: ہر3 ماہ بعددعوتِ اسلامی کاعربی ڈیپارٹمنٹ عربی میں رسالہ’’ نَفحَاتُ المدینہ ‘‘شائع کرے گا،اس کا پہلارسالہ شائع ہوچکا ہے، اس کے بارے میں امیراہلسنت نے کیا ارشادفرمایا؟

جواب: ’’ نَفحَاتُ المدینہ ‘‘عربی رسالہ ہےجو ہر3 مہینے بعدجاری ہوگا، اسلامی بھائی بالخصوص عربیوں کوبطورِ تحفہ دیں ،مَیں اس کا پہلا گاہک بنتاہوں ،یااللہ پاک ! جوکوئی ایک سال کے لیے’’ نَفحَاتُ المدینہ ‘‘ بُک کروالے،مرنے سے پہلے اسے پیارے حبیب صل اللہ علیہ والہ وسلم کی زیارت نصیب فرما ،یہ دعااُس کے حق میں بھی قبول فرماجسے عربی آتی ہویا نہ آتی ہو،کسی عربی یا عالم صاحب کو تحفۃًدے ۔

سوال : آپ حاجی مشتاق عطاری رحمۃ اللہ علیہ سے کیوں محبت کرتے ہیں؟

جواب :حاجی مشتاق عطاری رحمۃ اللہ علیہ A گریڈ کےنعت خواں تھے ، لیکن یہ (نعت پڑھنےپر)کوئی پائی پیسہ نہیں لیتے تھے ،یہ واحدنعت خواں تھےجو بہترین مبلغ بھی تھے،طریقت کو سمجھتے تھے ،میرے بہت قریب تھے ، تنظیمی ذہن رکھتے تھے،یوں ان سےمحبت ہوگئی۔اراکینِ شوریٰ دعوتِ اسلامی کی کریم ہیں ، میں نے انہیں مرکزی مجلس ِشوریٰ کا نگران بنادیا۔حاجی مشاق اورسیدعبدالقادرباپوشریف دونوں کا 29 شعبان المعظم کو انتقال ہوا،یہ دونوں دعوت ِاسلامی کے محسنین میں سے ہیں ، جتنا اللہ پاک نےچاہاانہوں نے دعوتِ اسلامی کا بڑا کام کیا ۔اللہ پاک انہیں جنت میں پیارےحبیبصلی اللہ علیہ والہ وسلم کا پڑوس نصیب فرمائے۔

سوال : کون سادُرُودشریف پڑھ سکتے ہیں ، صَلَّی اللہُ عَلَیْہِ وَسَلَّم یا صَلَّی اللہُ عَلَیْہِ وَالِہٖ وَسَلَّم ؟

جواب: دونوں پڑھ سکتے ہیں لیکن صَلَّی اللہُ عَلَیْہِ وَالِہٖ وَسَلَّم پڑھنے سے ثواب بڑھ جائے گاکہ اس میں آل پربھی دُرُودپڑھا گیا ہے،وَاَصْحَابِہٖ بڑھا دیں گے تو ثواب مزید بڑھ جائے گا ۔

سوال: طوطاذکرودُرُودپڑھے تو کیا اُسے ثواب ملتاہے اورجب وہ سلام کرے تو اس کا جواب دینا واجب ہے؟

جواب: اسے ثواب نہیں ملتااورنہ ہی اس کے سلام کاجواب دینا واجب ہے ۔

سوال: اچھی صحبت کاکیا فائدہ ہے؟

جواب: صحبت اثررکھتی ہے ، اچھے مسلمانوں کی صحبت میں رہیں گےتو اچھے ہوجائیں گے ،نعتیں پڑھنے والے بن جائیں گے ۔

سوال: اِس ہفتے کارِسالہ” ماہِ رمضان اور امیرِ اہلِ سنت پڑھنے یاسُننے والوں کوجانشین ِ امیرِاہلِ ِسُنّت دَامَتْ بَرَکَاتُہُمُ الْعَالِیَہ نے کیا دُعا دی ؟

جواب: یااللہ !جو کوئی 27 صفحات کا رسالہ ” ماہِ رمضان اور امیرِ اہلِ سنت “ پڑھ یا سُن لےاُسے عاشقِ رمضان المبارک امیرِ اہلِ سنت کے صدقے رمضان المبارک کا حقیقی قدر دان بناکر فیضانِ رمضان سے مالا مال فرما اور رمضان المبارک کو اس کی بے حساب بخشش کا ذریعہ بنا۔اٰمِیْن بِجَاہِ النَّبِیِّ الْاَمِیْن صلَّی اللہ علیہ واٰلہٖ وسلَّم


امیرِ اہلِ سنت حضرت علامہ مولانا الیاس عطار قادری  دَامَتْ بَرَکَاتُہُمُ الْعَالِیَہ پچھلے کئی سالوں سے مسلسل”مدنی مذاکرہ“ نامی ہفتہ وار ایسی علمی نشست قائم فرماتے ہیں جس میں شرکت کرنے والے ہر خاص و عام کو شرعی، طبی، تاریخی اور تنظیمی معلومات کا خزانہ ہاتھ آتا ہے۔

اسی سلسلے میں آج مورخہ 10اپریل 2021ء رات 9:30 بجے مین یونیورسٹی روڈ پر واقع عالمی مدنی مرکز فیضان مدینہ کراچی سے براہ راست مدنی مذاکرے کا انعقاد کیا جائیگا جس میں امیر اہل سنت علامہ محمد الیاس عطار قادری دَامَتْ بَرَکَاتُہُمُ الْعَالِیَہ عاشقان رسول کی جانب ہونے والے سوالات کے جوابات ارشاد فرمائیں گے۔

تمام عاشقان رسول سے درخواست کی جاتی ہے کہ مدنی مذاکرے میں شرکت کرکے علم دین کا ڈھیروں ڈھیر خزانہ حاصل کریں۔ 


03اپریل 2021ء کی شب عالمی مدنی مرکز فیضانِ مدینہ کراچی میں ہفتہ وار مدنی مذاکرے کا سلسلہ ہوا جس میں بانیِ دعوتِ اسلامی حضرت علامہ مولانا محمدالیاس عطار قادری دَامَتْ بَرَکَاتُہُمُ الْعَالِیَہ نے عاشقانِ رسول کو علم و حکمت سے بھرپور مدنی پھول عطا فرمائے۔ عالمی مدنی مرکز فیضانِ مدینہ کراچی میں ہزاروں جبکہ بیشتر مقامات پر لاتعداد عاشقانِ رسول نے جمع ہوکر اس مدنی مذاکرے میں شرکت کی سعادت حاصل کی۔

مدنی مذاکرے کے مدنی پھول ملاحظہ کیجئے

سوال : فضول بات کسے کہتے ہیں ؟

جواب : فضول بات وہ ہے جس کا نہ دنیا کا فائدہ ہو نہ آخرت کا بلکہ آخرت میں اس کا حساب دینا ہوگااوردنیا میں فضول باتوں سے وقت ضائع ہوتاہے ،اس وقت میں ذکردُرودکیاجاسکتا ہے۔

سوال : حیا کسےکہتےہیں ؟

جواب: حیاجسے اردومیں شرم کہا جاتاہے ، یہ تمام انسانوں میں ہوتی ہے بلکہ بعض جانوروں میں بھی ہوتی ہے جیسے ہاتھی میں ،حیا کا معنی ہے:عیب لگائے جانے کے خوف سے شرمانا ،اس میں خاصیت یہ ہےکہ یہ اللہ پاک کے ناپسندیدہ کاموں سے روکتی ہے اورلوگ جس بات کو ناپسندکریں اس سے بھی شرم وحیا والابندہ رک جاتاہے،پسندیدہ حیا وہ ہےجس کی وجہ سے اللہ پاک کی نافرمانی نہ ہو۔

سوال: شیخ شہاب الدین سہروردی رحمۃ اللہ علیہ کس زمانے کے بزرگ ہیں ؟

جواب: یہ حضورغوث پاک رحمۃ اللہ علیہ کے زمانے کے ہیں ،انہوں نے حضورغوث پاک رحمۃ اللہ علیہ کی صحبت پائی ہے ،ان کا مزاربغدادشریف میں ہے ۔

سوال: کیا جنت میں کسی قسم کا خوف ورنج ہوگا ؟

جواب:نہیں !جنت میں کسی قسم کی کوئی ٹینشن ،خوف،رنج،ظلم بلکہ گنا ہ کا تصوربھی نہیں ہوگا ۔

سوال : آپ نے کس طرح دینی کام کیا ہے ؟

جواب: میں نے سینکڑوں بلکہ ہزاروں مساجد میں جاجاکرنمازیں پڑھی ہیں (بیانات کئے ہیں،مدنی قافلوں میں سفرہواہے،نیکی کی دعوت دی ہے )،اسی طرح جنازے بہت زیادہ پڑھائےہیں، تدفین میں شرکت کی ہے،نکاح پڑھائے ہیں،شادی کے موقع پر محفلِ نعت کا رواج بھی اَلْحمدُللہ دعوتِ اسلامی نے دیا ہے۔

سوال: پیٹ بھرجائے پھربھی کھانے کو جی چاہے تو کیا کرنا چاہئے ؟

جواب: بُھوک کے تین حِصّے کرنا بہتر ہے۔ایک حصّہ کھانا،ایک حِصّہ پانی اور ایک حِصّہ ہوا۔مَثَلاً تین روٹی میں سَیر ہوجاتے ہیں تَو ایک روٹی کھایئے ایک روٹی جتنا پانی اور باقی ہوا کیلئے خالی چھوڑدیجئے۔اگر پَیٹ بھرکر بھی کھا لیا تو مُباح ہے کوئی گُناہ نہیں۔ مگر کم کھانے کی دینی و دُنیوی بَرَکتیں مرحبا! تجرِبہ کر کے دیکھ لیجئے۔ اِن شاء اللّٰہُ الکریم پیٹ ایسا دُرُست ہو جائے گا کہ آپ حیران رہ جائیں گے۔ اللہ پاک ہم سب کو پیٹ کا قفلِ مدینہ نصیب فرمائے۔ یعنی حرام سے بچنے اور حلال کھانا بھی ضَرورت سے زیادہ کھانے سے بچائے۔(کھانے کا اسلامی طریقہ،ص24)

سوال: اِس ہفتے کارِسالہرشتہ داروں سے بھلائی پڑھنے یاسُننے والوں کو امیرِاہلِ ِسُنّت دَامَتْ بَرَکاتُہُمُ الْعَالِیَہ  نے کیا دُعا دی ؟

جواب: یاربَّ المصطفٰے! جو کوئی 16 صفحات کا رسالہرشتہ داروں سے بھلائی پڑھ یا سُن لےاُسے اور اُس کے سارے خاندان کو حج، مدینۂ پاک کی باادب حاضری، جلوۂ مصطفٰے صلَّی اللہ علیہ واٰلہٖ وسلَّم میں شہادت کی موت اور جنتُ الفردوس میں بے حساب داخلہ عطا فرما۔ اٰمِیْن بِجَاہِ النَّبِیِّ الْاَمِیْن صلَّی اللہ علیہ واٰلہٖ وسلم


03اپریل 2021ء کی شب عالمی مدنی مرکز فیضانِ مدینہ کراچی میں ہفتہ وار مدنی مذاکرے کا سلسلہ ہوا جس میں بانیِ دعوتِ اسلامی حضرت علامہ مولانا محمدالیاس عطار قادری دَامَتْ بَرَکَاتُہُمُ الْعَالِیَہ نے عاشقانِ رسول کو علم و حکمت سے بھرپور مدنی پھول عطا فرمائے۔ عالمی مدنی مرکز فیضانِ مدینہ کراچی میں ہزاروں جبکہ بیشتر مقامات پر لاتعداد عاشقانِ رسول نے جمع ہوکر اس مدنی مذاکرے میں شرکت کی سعادت حاصل کی۔

مدنی مذاکرے کے مدنی پھول ملاحظہ کیجئے

سوال : فضول بات کسے کہتے ہیں ؟

جواب : فضول بات وہ ہے جس کا نہ دنیا کا فائدہ ہو نہ آخرت کا بلکہ آخرت میں اس کا حساب دینا ہوگااوردنیا میں فضول باتوں سے وقت ضائع ہوتاہے ،اس وقت میں ذکردُرودکیاجاسکتا ہے۔

سوال : حیا کسےکہتےہیں ؟

جواب: حیاجسے اردومیں شرم کہا جاتاہے ، یہ تمام انسانوں میں ہوتی ہے بلکہ بعض جانوروں میں بھی ہوتی ہے جیسے ہاتھی میں ،حیا کا معنی ہے:عیب لگائے جانے کے خوف سے شرمانا ،اس میں خاصیت یہ ہےکہ یہ اللہ پاک کے ناپسندیدہ کاموں سے روکتی ہے اورلوگ جس بات کو ناپسندکریں اس سے بھی شرم وحیا والابندہ رک جاتاہے،پسندیدہ حیا وہ ہےجس کی وجہ سے اللہ پاک کی نافرمانی نہ ہو۔

سوال: شیخ شہاب الدین سہروردی رحمۃ اللہ علیہ کس زمانے کے بزرگ ہیں ؟

جواب: یہ حضورغوث پاک رحمۃ اللہ علیہ کے زمانے کے ہیں ،انہوں نے حضورغوث پاک رحمۃ اللہ علیہ کی صحبت پائی ہے ،ان کا مزاربغدادشریف میں ہے ۔

سوال: کیا جنت میں کسی قسم کا خوف ورنج ہوگا ؟

جواب:نہیں !جنت میں کسی قسم کی کوئی ٹینشن ،خوف،رنج،ظلم بلکہ گنا ہ کا تصوربھی نہیں ہوگا ۔

سوال : آپ نے کس طرح دینی کام کیا ہے ؟

جواب: میں نے سینکڑوں بلکہ ہزاروں مساجد میں جاجاکرنمازیں پڑھی ہیں (بیانات کئے ہیں،مدنی قافلوں میں سفرہواہے،نیکی کی دعوت دی ہے )،اسی طرح جنازے بہت زیادہ پڑھائےہیں، تدفین میں شرکت کی ہے،نکاح پڑھائے ہیں،شادی کے موقع پر محفلِ نعت کا رواج بھی اَلْحمدُللہ دعوتِ اسلامی نے دیا ہے۔

سوال: پیٹ بھرجائے پھربھی کھانے کو جی چاہے تو کیا کرنا چاہئے ؟

جواب: بُھوک کے تین حِصّے کرنا بہتر ہے۔ایک حصّہ کھانا،ایک حِصّہ پانی اور ایک حِصّہ ہوا۔مَثَلاً تین روٹی میں سَیر ہوجاتے ہیں تَو ایک روٹی کھایئے ایک روٹی جتنا پانی اور باقی ہوا کیلئے خالی چھوڑدیجئے۔اگر پَیٹ بھرکر بھی کھا لیا تو مُباح ہے کوئی گُناہ نہیں۔ مگر کم کھانے کی دینی و دُنیوی بَرَکتیں مرحبا! تجرِبہ کر کے دیکھ لیجئے۔ اِن شاء اللّٰہُ الکریم پیٹ ایسا دُرُست ہو جائے گا کہ آپ حیران رہ جائیں گے۔ اللہ پاک ہم سب کو پیٹ کا قفلِ مدینہ نصیب فرمائے۔ یعنی حرام سے بچنے اور حلال کھانا بھی ضَرورت سے زیادہ کھانے سے بچائے۔(کھانے کا اسلامی طریقہ،ص24)

سوال: اِس ہفتے کارِسالہرشتہ داروں سے بھلائی پڑھنے یاسُننے والوں کو امیرِاہلِ ِسُنّت دَامَتْ بَرَکاتُہُمُ الْعَالِیَہ  نے کیا دُعا دی ؟

جواب: یاربَّ المصطفٰے! جو کوئی 16 صفحات کا رسالہرشتہ داروں سے بھلائی پڑھ یا سُن لےاُسے اور اُس کے سارے خاندان کو حج، مدینۂ پاک کی باادب حاضری، جلوۂ مصطفٰے صلَّی اللہ علیہ واٰلہٖ وسلَّم میں شہادت کی موت اور جنتُ الفردوس میں بے حساب داخلہ عطا فرما۔ اٰمِیْن بِجَاہِ النَّبِیِّ الْاَمِیْن صلَّی اللہ علیہ واٰلہٖ وسلم


امیرِ اہلِ سنت حضرت علامہ مولانا الیاس عطار قادری  دَامَتْ بَرَکَاتُہُمُ الْعَالِیَہ پچھلے کئی سالوں سے مسلسل”مدنی مذاکرہ“ نامی ہفتہ وار ایسی علمی نشست قائم فرماتے ہیں جس میں شرکت کرنے والے ہر خاص و عام کو شرعی، طبی، تاریخی اور تنظیمی معلومات کا خزانہ ہاتھ آتا ہے۔

اسی سلسلے میں آج مورخہ 03 اپریل 2021ء رات 9:30 بجے مین یونیورسٹی روڈ پر واقع عالمی مدنی مرکز فیضان مدینہ کراچی سے براہ راست مدنی مذاکرے کا انعقاد کیا جائیگا جس میں امیر اہل سنت علامہ محمد الیاس عطار قادری دَامَتْ بَرَکَاتُہُمُ الْعَالِیَہ عاشقان رسول کی جانب ہونے والے سوالات کے جوابات ارشاد فرمائیں گے۔

تمام عاشقان رسول سے درخواست کی جاتی ہے کہ مدنی مذاکرے میں شرکت کرکے علم دین کا ڈھیروں ڈھیر خزانہ حاصل کریں۔


27مارچ 2021ء کی شب عالمی مدنی مرکز فیضانِ مدینہ کراچی میں ہفتہ وار مدنی مذاکرے کا سلسلہ ہوا جس میں بانیِ دعوتِ اسلامی حضرت علامہ مولانا محمدالیاس عطار قادری دَامَتْ بَرَکَاتُہُمُ الْعَالِیَہ نے عاشقانِ رسول کو علم و حکمت سے بھرپور مدنی پھول عطا فرمائے۔ عالمی مدنی مرکز فیضانِ مدینہ کراچی میں سینکڑوں جبکہ بیشتر مقامات پر ہزاروں عاشقانِ رسول نے جمع ہوکر اس مدنی مذاکرے میں شرکت کی سعادت حاصل کی۔

امیر اہل سنت دَامَتْ بَرَکَاتُہُمُ الْعَالِیَہ نے ”تکبر“ کے حوالے سے مدنی پھول دیتے ہوئے فرمایا کہ اپنے آپ کو دوسروں سے بَڑھیا (اعلیٰ) اور دوسروں کواپنے آپ سے گھٹیا جانناتکبرہے ،یہ بہت پایا جاتاہے ،بہت خطرہ ہوتاہے کہ استاذشاگردکے بارے میں تکبرمیں مبتلاہوجائے وغیرہ، تکبر،علم،نسب ،عہدےاورطاقت وغیرہ سے پیداہوتاہے ، بندہ اللہ پاک کی بے نیازی سے ڈرے، ذہن بنائے کہ اللہ پاک سب سے بڑاہے،غنی ہے ،بے نیازہے ،بڑائی اللہ کے لائق ہے ،رب کائنات تکبرکرنے والوں کو پسندنہیں فرماتا ،یہ ذہن بھی بنائے کہ دوسرا مجھ سے تقویٰ میں اچھاہے تو تکبرسے بچت ہوگی ۔

سوال : شبِ براءَت کو اتنی اہمیت کیوں دی جاتی ہے ؟

جواب: شبِ براءَت کا معنی ہے چھٹکارا (نجات)پانے کی رات ،یہ شعبان کی 15ویں رات ہے ، حدیثوں میں اس کی اہمیت بیان کی گئی ہے ،نبیِ پاک صلی اللہ علیہ والہ وسلم اس رات قبرستان تشریف لے گئے تھے ،یہ توبہ کرکے گُناہوں سے چُھٹکارا(نجات)پانے کی رات ہے،اس رات عذابِ قبر،جہنم ،بیماری وغیرہ سے نجات کی دعاکرے ،رات میں عبادت کرے ،اگلے دن روزہ رکھے ،یہ رات قبولیت والی راتوں میں سے ایک ہے،البتہ رسولِ اکرم صلی اللہ علیہ والہ وسلم نے فرمایا:6 آدمیوں کی اس رات بھی بخشش نہیں ہوگی:(1)شراب کا عادی (2)ماں باپ کا نافرمان (3)زِناکا عادی (4)قطعِ تعلق کرنے والا (5)تصویربنانے والااور (6)چغل خور(فضائل الاوقات، 1/130، حدیث 27)

سوال: شبِ براءت میں رسمی معافی مانگنے سے کیامعافی ہوجائے گی؟

جواب: نہیں ،بلکہ دل سے معافی مانگنی ہوگی، البتہ اس موقع پرمیسج(Message) یا واٹس ایپ(Whatsapp) پرمعافی مانگی جاتی ہے ، مَیں اس کی بھی پذیرائی کرتاہوں کہ کسی طرح لوگوں کا معافی مانگنے کا ذہن تو بنا ،بہرحال صرف میسج/واٹس ایپ کرنے سےمعافی ہوجائے ایسانہیں ہے ۔

سوال: کیاکولڈڈرنک اور فاسٹ فوڈ استعمال کرنے سے بچناچاہئے ؟

جواب: جی ہاں! کولڈ ڈرنک اورفاسٹ فوڈ صحت کو نقصان دیتے ہیں ،اس میں طرح طرح کی چکناہٹ اورکیمیکل ڈالے جاتے ہیں ،یہ کھانے سے کولیسٹرول،شوگروغیرہ طرح طرح کی بیماریاں پیداہوتی ہیں ،کہاجاتاہے کہ ایک بوتل میں 7چمچ سفیدشوگر(چینی) ہوتی ہے،اس لیے گھرکی نارمل غذاکھانی چاہئے ۔کھانابھی کم کھائیں ،ماہِ رمضان میں کہتے ہیں ہم کم کھارہے ہیں ،جبکہ عام معمول سےزیادہ کھا رہے ہوتے ہیں ۔احتیاطیں کریں گے تو صحت مندرہیں گے ، پہاڑی نمک(Pink Salt) استعمال کریں،صحت اچھی ہوگی تو عبادت کرسکیں گے ۔

سوال : اچھا سوال کس طرح کیا جائے ؟

جواب: سوال معلومات کی چابی ہے ،اس لیے سوال اچھے اندازمیں ہونا چاہئے،بعض معاملات میں زیادہ سوالات کرنا منع ہے ،مجھے فقہی سوالات(مثلاً نماز،روزے وغیر ہ سے متعلق )بہت اچھے لگتے ہیں،میری زندگی کا ایک حصہ فقہی سوالات کے جوابات لینے(یعنی علمِ دین کے حصول)میں گزراہے۔

سوال: بچے بہت سوال کرتےہیں تو کیا کریں ؟

جواب: سوالات کےجوابات دینے چاہئیں ،بچوں کو جھاڑیں نہیں ،ڈانٹیں نہیں ،غلط جواب نہ دیں ،بعض سوالات کا جواب دینا ان کی عمرکے مطابق مناسب نہیں ہوتا ،ایسی صورت میں ان کے ذہن کو کسی اورطرف پھیر دیں ۔

سوال: اِس ہفتے کارِسالہقبرکی پہلی رات پڑھنے یاسُننے والوں کو امیرِاہلِ ِسُنّت دَامَتْ بَرَکاتُہُمُ الْعَالِیَہ نے کیا دُعا دی ؟

جواب: یارَبَّ المصطفٰی! جو کوئی 36صفحات کا رسالہقبرکی پہلی رات پڑھ یا سُن لے،نورِمصطفی(صلَّی اللہ علیہ واٰلہٖ وسلَّم )کے صدقےاُس کی قبرروشن فرما ۔اٰمِیْن بِجَاہِ النَّبِیِّ الْاَمِیْن صلَّی اللہ علیہ واٰلہٖ وسلَّم


عاشقان رسول کی دینی و دنیاوی تربیت کرنے، علمِ دین سے سیراب کرنے اور اسلامی بھائیوں کو محبتِ اہل بیت، صحابہ و اولیاء عظام کا جام پلانے کے لئے ہر ہفتے دعوت اسلامی کے زیر اہتمام مدنی مذاکرے کا انعقاد کیا جاتا ہے۔

اسی سلسلے میں آج مورخہ 27 مارچ 2021ء رات 9:30 بجے یونیورسٹی روڈ پر واقع عالمی مدنی مرکز فیضان مدینہ کراچی سے براہ راست مدنی چینل پر مدنی مذاکرے کا انعقاد کیا جائیگا جس میں امیر اہل سنت علامہ محمد الیاس عطار قادری دَامَتْ بَرَکَاتُہُمُ الْعَالِیَہ عاشقان رسول کی جانب ہونے والے سوالات کے جوابات ارشاد فرمائیں گے۔

تمام عاشقان رسول سے درخواست کی جاتی ہے کہ مدنی مذاکرے میں شرکت کرکے علم دین کا ڈھیروں ڈھیر خزانہ حاصل کریں۔


20مارچ 2021ء کی شب عالمی مدنی مرکز فیضانِ مدینہ میں ہفتہ وار مدنی مذاکرے کا سلسلہ ہوا جس میں بانیِ دعوتِ اسلامی حضرت علامہ مولانا محمدالیاس عطار قادری دَامَتْ بَرَکَاتُہُمُ الْعَالِیَہ نے عاشقانِ رسول کو علم و حکمت سے بھرپور مدنی پھول عطا فرمائے۔ عالمی مدنی مرکز فیضانِ مدینہ کراچی میں سینکڑوں جبکہ بیشتر مقامات پر ہزاروں عاشقانِ رسول نے جمع ہوکر اس مدنی مذاکرے میں شرکت کی سعادت حاصل کی۔

مدنی مذاکرے میں امیرِ اہلِ سنت نے سوشل میڈیا پر جواب دینے کے حوالے مدنی پھول دیتے ہوئےفرمایا کہ مجھے یادنہیں کہ میں نےکبھی زندگی میں کسی کو جواب دینے کا کہاہو،میری پالیسی یہی ہے کہ میں کسی کو جواب نہیں دیتا،کیونکہ جواب دیا جائےتو جوابُ الجواب آجائے گا ،اب اس کا جواب دو!اس لیےبہترہے کہ میں جواب دینے کے بجائے کسی کو نمازسکھا دوں۔مجھ سے غلطی نہ ہوایسانہیں ہے ، اگرمجھ سے کوئی غلطی ہوجائےاورآپ کےپاس شرعی دلیل ہوتو مجھے سوشل میڈیا پرسمجھانے کےبجائے ڈائریکٹ سمجھادیا جائے، میں تو رُجوع کرتاہی ہوں آپ کو معلوم ہے ،مجھ سے جواب نہ طلب کیا جائے ،کیونکہ بعض اوقات جواب ہوتاہے مگرہرایک کےسامنے بیان نہیں کیا جاسکتا۔ یہ بھی یادرکھیں کہ جب تک شرعاًواجب نہ ہوسوشل میڈیا پر کسی کونہیں سمجھانا چاہئے۔

مدنی مذاکرے کے مزیدمدنی پھول ملاحظہ کریں:

سوال : والدین فوت ہونے کے بعد بڑے بہن بھائیوں کو اپنے چھوٹے اورغریب بھائی بہنوں کےساتھ کیساسُلُوک کرناچاہئے ؟

جواب :صِلۂ رحمی یعنی رشتے داروں سے اچھاسُلوک کرنا تو واجِب ہے ،والدین کی وفات کے بعداَخلاقی طورپر بڑے بہن بھائیوں کی ذمہ داری بڑھ جاتی ہے ،یہ اُن کی د لجُوئی کریں ،بڑابھائی باپ اوربڑی بہن ماں کی کمی محسوس نہ ہونے دے،یہ مالی طورپر مضبوط ہوں تو چھوٹوں کی مددکریں، بالخصوص غیرشادی شدہ بھائی بہنوں کی شادی کروائیں ،بھائیوں کو کاروبارمیں شریک کرے تاکہ وہ بھی مالی طورپربھی مضبوط ہوں۔جانی مالی ہرطرح سے حُسنِ سُلوک کرنا چاہئے ۔

سوال : روٹی کو چُھری سے کاٹنا کیسا،یہ رزق کی بے ادبی تو نہیں ؟

جواب: چُھری سے کاٹ سکتے ہیں ،یہ رزق کی بے ادبی نہیں ۔

سوال: کم الفاظ پر مشتمل کون سادُرُودشریف ہے؟

جواب:کم الفاظ کے دُرُود شریف (1) صَلَّی اللہ ُعَلٰی مُحَمَّد(2)صَلَّی اللہ ُعَلَی النَّبِیّ(3)صَلَّی اللہُ عَلَیْہِ وَسَلَّم ،جوچاہیں پڑھیں ،بُزرگوں نے یہ بھی فرمایاہے کہ صیغے بدل بدل کردُرُودشریف پڑھنا چاہئے ۔

سوال: سب سے افضل دُرُودشریف کون سا ہے ؟

جواب: سب سے افضل دُرُودشریف دُرُودِابراہیمی ہے،البتہ اس میں سلام نہیں ،اس کے ساتھ وہ دُرُودشریف پڑھا جائے جس میں سلام بھی ہومثلاً صَلَّی اللہُ عَلَیْہِ وَسَلَّم،قرآن ِ کریم میں اللہ پاک نے دُرُودشریف اورسلام دونوں پڑھنےکا حکم فرمایاہے۔

سوال : آپ کی بات سنتے ہیں تورُوح پر اثرہوتاہے لیکن جب گھرکے کاموں میں مصروف ہوتے ہیں تویہ اثرختم ہوجاتاہے ،اس کا حل ارشادفرمائیں ؟

جواب: جیسی بیماری ویساعلاج ،تھوڑاسابُخارہوتوطبیب کے مشورے سے ایک گولی کافی اوراگرزیادہ ہوتو زیادہ دوالینی پڑتی ہے،بیماری مزیدہوجائے تو ہسپتال میں داخل ہونا پڑتاہے،اسی طرح کانٹاچُبھ جائے توپہلے کانٹانکالناپڑتاہے ،اسی طرح جو زیادہ گنہگارہوتو اسے توبہ کرکے علمِ دین حاصل کرکے نیک اعمال میں مصروف ہوناچاہئے ،دعوتِ اسلامی کے دِینی ماحول سے ہردم وابستہ ہوجائیے، آقاصلی اللہ علیہ والہ وسلم کے پیچھےپیچھے جنّت میں داخل ہوں گے۔ اِنْ شَاۤءَ اللہ

سوال: امیراہلِ سُنّت نے اپنے لڑکپن میں محافل میں شرکت کےبارے میں کیا فرمایا؟

جواب:میں اپنے لڑکپن میں محافلِ ذکر ونعت میں شرکت کرتاتھا ،اس میں جو کلام پڑھا جاتا تھا،میرے دل میں اثرکرتاتھا جس کے دوشعریہ ہیں :

سونے والے رب کو سجد کرکے سو ٭کیا خبراُٹھے نہ اُٹھے صُبح کو

کیا خبر تیری صبح ہو نہیں ٭تو کہیں صبح نہ ہو زیر زمیں

سوال: کرونا وائرس سےبچنے کا کوئی وظیفہ ارشادفرمادیں۔

جواب: کرونا وائرس وبائی مرض ہے ، بعض بزرگوں نے فرمایا:جواللہ کا صفاتی نام’’ یَاحَکِیْمُ‘‘ وباکے دنوں میں 88مرتبہ پڑھے،وہ اُس وبائی مرض سے محفوظ رہے گا۔اِن شاءَاللہ

سوال: امیراَہل سُنّت نےنئے رُکن ِشُوریٰ قاری محمدایازعطاری کے بارے میں کیا فرمایا ؟

جواب:الحاج قاری ایازعطاری چھوٹی سطح سے کام کرکرکے(دُھوم مچاکرشوریٰ میں پہنچے،رکنِ شوری بننے کے لیے ) کام کرنے کے ساتھ ساتھ عقل بھی ہونی چاہئے ، اچھاکردارہو ، باصلاحیّت ہو، اَخلاقی اِعتبارسے کمزورنہ ہو،دیگرمثلاً مالی مسائل بھی نہ ہوں،دُنیا بھرمیں جاسکتاہو، ہم تو اراکینِ شوریٰ کو دوڑاتے ہیں،ہمیں مزدورِ مدینہ چاہئے ۔ ہم نےرُکنِ شوری بنانےکا گیٹ بہت تنگ کردیا ہے،اُسےعہدے کی طلب بھی نہ ہو،کوئی بھی رُکن شوریٰ ایسانہیں ہے، جس نے رُکن شوریٰ بننے کامُطالَبہ کِیا ہو،ہم خود مشورہ کرکے رُکن ِشوری بنانے کا طے کرتے ہیں تاکہ وہ زیادہ دِین کا کام کرسکے۔

سوال: مبلغین ومبلغات نبیِ کریم صلی اللہ علیہ والہ وسلم کے لیے کیا الفاظ بولتے رہیں ؟

جواب:مبلغین ومبلغات کو چاہئے کہ وہ گاہے بگاہے نبیِ کریم صلی اللہ علیہ والہ وسلم کےلئے’’اللہ کے آخری نبی ‘‘کے الفاظ کہتے رہیں تاکہ بچے بچے کو معلوم ہوجائے کہ ہمارے پیارے نبی صلی اللہ علیہ والہ وسلم اللہ کے آخری نبی ہیں ۔

سوال: رِسالہ مطالعہ کارکردگی میں کیا اِحتیاط کی جائے ؟

جواب: جو مکمل رِسالہ پڑھے اُسی کی کارکردگی شامل کی جائے،اگرکوئی آیت یاعربی عبارت یا شعرنہ پڑھا ہوتو حرج نہیں ۔

سوال : جو شخص قرآنِ کریم یا دکرے، پھراُسے بُھلادے تو وہ قِیامت کے دِن کس طرح اُٹھایا جائے گا؟

جواب : جوشخص قرآنِ کریم یا دکرے پھراُسے بُھلادے تو قِیامت کےدن اللہ پاک سے کوڑھی ہوکرملے۔ (ابوداؤد،حدیث1474)

سوال: اِس ہفتے کارِسالہدرود شریف کی برکتیں پڑھنے یاسُننے والوں کو امیرِاہلِ ِسُنّت دَامَتْ بَرَکاتُہُمُ الْعَالِیَہ نے کیا دُعا دی ؟

جواب: یااللہ! جو کوئی 16 صفحات کا رسالہدُرود شریف کی برکتیں پڑھ یا سن لے،اُس سے ہمیشہ کے لئے راضی ہوجا اور اس کو مدینۂ پاک میں درود و سلام پڑھتے ہوئے جلوۂ محبوب صلَّی اللہ تعالٰی علیہ واٰلہٖ وسلَّم میں عافیت کے ساتھ شہادت عطا فرما ۔اٰمِیْن بِجَاہِ النَّبِیِّ الْاَمِیْن صلَّی اللہ علیہ واٰلہٖ وسلَّم


علم کی مجلس میں حاضر ہونا ہزار رکعت نَفْل پڑھنے، ہزار جنازوں میں شرکت کرنے اور ہزار مریضوں کی عیادت کرنے سے بہتر ہے۔ (احیاء العلوم مترجم جلد 1،ص136) ۔مدنی مذاکرہ بھی علم دین حاصل کرنے کا بہترین ذریعہ ہے ۔

دعوتِ اسلامی کے زیرِ اہتمام ہر ہفتے کی رات بعد نمازِ عشاء ہفتہ وار مدنی مذاکرے کا سلسلہ ہوتا ہے جس میں بانیِ دعوتِ اسلامی حضرت علامہ مولانا محمدالیاس عطار قادری دَامَتْ بَرَکَاتُہُمُ الْعَالِیَہ اپنے قیمتی ملفوظات عطا فرماتے ہیں۔

اسی سلسلے میں آج رات تقریباً ساڑھے9 بجے مین یونیورسٹی روڈ کراچی پر واقع عالمی مدنی مرکزفیضانِ مدینہ میں ہفتہ وار مدنی مذاکرے کا آغاز ہوجائے گا جس میں امیرِ اہلِ سنت دَامَتْ بَرَکَاتُہُمُ الْعَالِیَہ عاشقانِ رسول کے سوالات کے حکمت بھرے جوابات ارشاد فرمائیں گے۔

تمام عاشقانِ رسول سے گزارش ہے کہ مدنی مذاکرے میں شرکت کرکے علم دین کا ڈھیروں ڈھیر خزانہ حاصل کریں۔


آج 4 شعبان المعظم 1442ھ نواسۂ رسول، سردار نوجوانانِ جنت، گلشنِ فاطمہ کے پھول، سید الشہداء امام عالی مقام حضرت سیدنا امام حسین رضی اللہ عنہ کے جشن ولادت کی خوشی میں عالمی مدنی مرکز فیضان مدینہ کراچی میں مدنی مذاکرے کا انعقاد کیا جائیگا۔

مدنی مذاکرے کا آغاز تلاوت قرآن مجید سے ہوگا جبکہ نعت خواں حضرات بارگاہِ رسالت مآب صلَّی اللہ علیہ واٰلہٖ وسلَّم میں ہدیۂ نعت اور حضرت امام حسین رضی اللہ عنہکی شان میں منقبت پڑھیں گے۔

سیدالشہداء سیدنا امام حسین رضی اللہ عنہ کی شان و کرامت کو بیان کرتے ہوئے امیر اہل سنت دَامَتْ بَرَکَاتُہُمُ الْعَالِیَہ عاشقان رسول کی جانب سے ہونے والے سوالات کے جوابات بھی ارشاد فرمائیں گے۔ مدنی مذاکرے میں جلوس حسینی کا بھی اہتمام ہوگا جبکہ اختتام پر لنگرِ حسینی کا انتظام بھی کیا گیا ہے۔

واضح رہے کہ یہ مدنی مذاکرہ مدنی چینل پر بھی براہ راست نشر کیا جائیگا۔


13مارچ 2021ء کی شب عالمی مدنی مرکز فیضانِ مدینہ میں ہفتہ وار مدنی مذاکرے کا سلسلہ ہوا جس میں بانیِ دعوتِ اسلامی حضرت علامہ مولانا محمدالیاس عطار قادری دَامَتْ بَرَکَاتُہُمُ الْعَالِیَہ نے عاشقانِ رسول کو علم و حکمت سے بھرپور مدنی پھول عطا فرمائے۔ عالمی مدنی مرکز فیضانِ مدینہ کراچی میں سینکڑوں جبکہ بیشتر مقامات پر ہزاروں عاشقانِ رسول نے جمع ہوکر اس مدنی مذاکرے میں شرکت کی سعادت حاصل کی۔

مدنی مذاکرے میں امیرِ اہلِ سنت نے مدنی پھول دیتے ہوئے کہا کہ اگر والدین وفات پاجائیں توان کو راضی کرنے کے لئے ان کی قبرپرجانے کا معمول رکھیں اورفاتحہ پڑھیں، اپنے آپ کو گُناہوں سے بچائیں کیونکہ ہرجمعہ کو اولادکے اعمال والدین کو پیش کئے جاتے ہیں ،یہ اولادکی نیکیوں پر خوش اورگناہوں پر رنجیدہ ہوتے ہیں ،جو طاقت رکھتاہووہ ان کے ایصال ِثواب کے لئے مسجدیا مدرسہ بنادے،جوفرض حج کرچکا ہووہ ماں باپ کی طرف سےحج اداکرے ۔

مدنی مذاکرے کےمزید مدنی پھول ملاحظہ فرمائیں

سوال : کیاخطیب اورائمہ کرام کودیگربیانات کےساتھ ساتھ نمازوطہارت کےمسائل بھی بیان کرنےچاہئیں ؟

جواب :جی ہاں! تمام خطیبوں کو چاہئے کہ وہ اپنے بیانات میں تیاری کے ساتھ شرعی احکام بھی سکھائیں ،غسل ، نمازاورسُنّتوں کے بارے میں بتائیں ۔ہربیان میں 4سے5 منٹ نمازکے مسائل بیان کرنے اورسُنتیں سکھانےکے لیے مختص کریں،پھردیکھیں لوگ کتنے متوجہ ہوں گے۔ جب دعوتِ اسلامی کا آغازہواتو میں نمازکے بعد مسجدمیں کھڑاہوجاتا اورلوگوں کو کبھی وضو،کبھی غسل اورکبھی نمازسکھانے کا اعلان کرتا،لوگ دعایا بقیہ نمازکے بعدرک جاتے تھے۔

سوال: امتحان میں کامیابی کا کوئی وظیفہ بتادیجئے ؟

جواب: اہل ِایمان کے لئے سب سے بڑاوظیفہ نمازہے ،مردحضرات پانچوں نمازیں باجماعت ،تکبیرِاُولیٰ کے ساتھ پہلی صف میں اداکریں،اِنْ شَاۤءَ اللہُ الْکَرِیْم دنیاوآخرت میں کامیابی حاصل ہوگی ،جوبھی وظیفہ کریں اس کے ساتھ پانچ وقت کی نمازضروری ہے ،مقاصدکے حصول کے لئے چاہیں تو یہ وظیفہ کرسکتے ہیں ، نمازِعصرکے بعدوہیں بیٹھے بیٹھے یااللہُ یَارَحْمٰنُ یَارَحِیْمُ پڑھتےرہیں، سورج غروب ہوتو اپنی حاجت کی دعاکریں، اِنْ شَاۤءَ اللہُ الْکَرِیْم کامیابی ہوگی

سوال: تلاوت کرنا اوردُرُودشریف پڑھناکیسے وظیفے ہیں ؟

جواب: یہ دونوں بہت بڑے اوربہترین وظیفے ہیں ،تلاوت کے بارے میں ہے کہ اگرکوئی تلاوت کررہا ہے اوراسے دعا کا وقت نہ ملا تو اسے مانگنے سے زیادہ ملے گا اوردُرُودشریف پڑھنے کے فضائل بھی بہت ہیں ،ہرمرض کی دعا ہے صَلِّ عَلیٰ مُحَمَّد ۔

سوال:کیا شعبان کا چانددیکھنے کا ثواب ہے ؟

جواب: جی ہاں !5مہینوں کا چانددیکھنا،واجبِ کفایہ(یعنی اگر کچھ لوگوں نے تلاش کر لیا تو سب کا واجب ادا ہو گیا اور اگر کسی نے بھی تلاش نہ کیا تو سب ترکِ واجب کے مُرتکب ہونے کے سبب گناہ گار ہوئے) ہے: (1)شعبان(2)رمضان(3)شوال(4)ذِیقعدہ(5)ذُو الْحِجَّہ۔(بہارِشریعت،974/1)

سوال: کیا کوئی دنیوی کام شروع کرناہوتو اس کےبارے میں مفتی صاحب سے پوچھ لینا چاہئے؟

جواب: دِین کی سوچ ہونا اورآخرت کی فکرکرنا یہ بہت بڑی سعادت ہے، کوئی بھی کام شروع کرناچاہتے ہوں تو پہلے مفتی صاحب سے پوچھ لینا چاہئے۔

سوال: ماہِ شعبان کی تیاری کس طرح کریں ؟

جواب: اس کے لئے مکتبۃ المدینہ کے رسائل "آقاکا مہینا اورفیضان ِشعبان" کامُطالَعہ کیا جائے،ماہِ شعبان میں تلاوتِ قرآن اور دُرُود شریف کی کثرت کی جائے، نفل روزے رکھے جائیں ،خوب عبادت کی جائے۔

سوال: میں اپنےدوست کا خیال رکھتاہوں مگروہ میراخیال نہیں رکھتا،میں کیا کروں ؟

جواب: ایسے دوست کی دوستی چھوڑدینی چاہئے ،ایک قول ہے کہ اُس سے دوستی نہ کروجو تمہاری فضیلت نہ جانتاہوالبتہ دوستی فقط اللہ پاک کے لئے ہونی چاہئے ، اس لئے نہ ہوکہ وہ مالدارہے وہ کھلاتاپلاتاہے،اس کی باتوں میں لُطف آتاہے اوراس کی ہنسانے والی باتیں اچھی لگتی ہیں یا معاذاللہ وہ اَمْرَدہے ۔

سوال : بہت سے کام ہوں تو سب سے پہلے کون ساکام کرناچاہئے ؟

جواب :یہ دیکھا جائے کہ ان کاموں کی شرعی حیثیت کیا ہے ،جو اُس وقت شرعی طورپر لازم ہوتو اُسے پہلے کیا جائے مثلاًنمازکا وقت ہے تو پہلے نمازپڑھی جائے،اس کے بعداس اصول" نفع حاصل کرنے کے بجائے اپنے آپ کونقصان سے بچانا ضروری ہے " کو سامنے رکھتے ہوئے فیصلہ کریں کہ کون ساکام کروں ؟ عام طورپر بندہ وہ کام کرتاہے جس میں لطف زیادہ آتا ہےیاجس میں تن ِآسانی ہولیکن میں نے جواصول بیان کیا ہے اُسے پیش ِنظررکھیں گے تو فائدہ زیادہ ہوگا۔

سوال: اِس ہفتے کارِسالہ ” ڈرائیور کی موتپڑھنے یاسُننے والوں کو امیرِاہلِ ِسُنّت دَامَتْ بَرَکاتُہُمُ الْعَالِیَہنے کیا دُعا دی ؟

جواب:یااللہ پاک ! جو کوئی 17صفحات کا رسالہڈرائیور کی موت“ پڑھ یا سُن لے، اُس کوایمان و عافیت کے ساتھ مدینے میں جلوہ ٔمحبوب صلَّی اللہ علیہ واٰلہٖ وسلَّم میں شہادت اور جنت البقیع میں دفن ہونا نصیب فرما۔اٰمِیْن بِجَاہِ النَّبِیِّ الْاَمِیْن صلَّی اللہ علیہ واٰلہٖ وسلَّم


22رجب المرجب 1442ھ کی شب عالمی مدنی مرکز فیضان مدینہ کراچی میں عرس  حضرت سیدنا امیر معاویہ رضی اللہ عنہ اور ختمِ بخاری شریف کے سلسلے میں مدنی مذاکرے کا انعقاد کیا گیا۔ عاشقانِ صحابہ و اہل بیت نےمدنی مذاکرے میں شرکت کے لئے بڑی تعداد میں فیضان مدینہ کا رُخ کیا۔ اس مدنی مذاکرے کو اجتماعی طور پر دیکھنے کے لئے ملک کے مختلف شہروں اور بیرون ملک میں خصوصی انتظامات کئے گئے تھے جبکہ عالمی مدنی فیضان مدینہ میں مرکزی جامعۃ المدینہ کے طلبۂ کرام نے خصوصی طور پر شرکت کی۔

مدنی مذاکرے کے آغاز میں جلوس امیر معاویہ رضی اللہ عنہ کا سلسلہ بھی ہواجس میں عاشقان رسول نے امیر اہل سنت دَامَتْ بَرَکَاتُہُمُ الْعَالِیَہ کے ہمراہ شرکت کی سعادت پائی۔

امیر اہل سنت دَامَتْ بَرَکَاتُہُمُ الْعَالِیَہ نے کاتبِ وحی حضرت سیدنا امیر معاویہ رضی اللہ عنہ کی شان بیان کرتے ہوئے فرمایا کہ آپ رضی اللہ عنہ بہت زیادہ حوصلہ مند، سخی، دلیر اور معافی و درگزر سے کام لینے والے تھے، مزید یہ کہ امیر اہل سنت دَامَتْ بَرَکَاتُہُمُ الْعَالِیَہ نے عاشقان رسول کی جانب سے ہونے والے سوالات کے جوابات حکمت بھرے جوابات دیئے۔

دوران مدنی مذاکرہ درسِ نظامی (عالم کورس) کی آخری کلاس دورۃ الحدیث کے طلبہ کرام کو پڑھائی جانے والی حدیث پاک کی مشہور و معروف اور قرآنِ پاک کے بعد سے افضل کتاب ” الصحیح البخاری“کے ختم شریف کا سلسلہ بھی ہوا جس میں امیر اہل سنت دَامَتْ بَرَکَاتُہُمُ الْعَالِیَہ بخاری شریف کی آخری حدیث ، حدیث نمبر 7563 پڑھ کر سنائی اور حدیث پاک کے متعلق مدنی پھول بیان کئے۔

امیر اہل سنت دَامَتْ بَرَکَاتُہُمُ الْعَالِیَہ سے حدیث پاک پڑھنے والے طلباء انتہائی خوش ہوئے جس کا انہوں نے اپنے تاثرات کے ذریعے اظہار بھی کیا۔

مدنی مذاکرے کے چند مدنی پھول ملاحظہ کریں:

سوال : کیا ہاتھوں کی صفائی کے لیے لیموں(Lemon) کا استعمال کرسکتے ہیں؟

جواب:اگر لیموں کے ذریعے میل چُھوٹتا ہے ،کھانے کے بعد چکناہٹ اوربدبُو دُور ہوتی ہے تو لیموں کا استعمال کیا جاسکتا ہے۔

سوال : دین ِ اسلام نے عورتوں کو کیا تحفظ(Protection) دیا ہے؟

جواب: دینِ اسلام نے عورتوں کو بہت تحفظ (Protection)عطا فرمایا ہے، بیٹے سے زیادہ بیٹیوں کے فضائل ہیں، مکتبۃ المدینہ کےرسالے’’ زندہ بیٹی کنویں میں پھینک دی‘‘میں بیٹیوں کے فضائل بیان کیے گئےہیں ، اسی طرح ماں کے فضائل بھی ہیں، اللہ پاک ہمیں اسلام کی تعلیمات اور نبی ِپاک صلی اللہ علیہ والہ وسلم کی سنتوں پر عمل کرنے کی سعادت بخشے ۔

سوال:آجکل اینٹ کا جواب پتھرسے دینے کا ذہن ہے ، بعض لوگ بدلہ لینے کا ذہن رکھتے ہیں ،یہ مزاج کیسے تبدیل ہوسکتاہے ؟

جواب:اس کے بہت نقصانات ہیں ،انتقام لینے کے بجائے معاف کردینے کا مزاج پیداکریں ،اگرکوئی انتقام لینے میں حدسے گزرے گا توگناہوں میں پڑجائے گا،عفوودَرگزرسے کام لینا چاہئے، حدیث پاک ہے :تین باتیں جس شخص میں ہوں گی اللہ پاک قیامت کے دن اس کا حساب بہت آسان لے گا اوراس کو اپنی رحمت سے جنّت میں داخل کرے گا:(1)جوتمہیں محروم کرے تم اُسے عطاکرو(2)جوتم سے تعلق توڑے تم اُس سے تعلق جوڑو(3)جوتم پرظلم کرے تم اُسے مُعاف کردو۔(معجم اوسط،4/18،رقم 5064)دعوتِ اسلامی کے دِینی ماحول میں آپ کو ایسے بھی ملیں گے جوانتقام نہیں لیتے بلکہ مُعاف کردیتے ہیں ،آپ بھی دعوتِ اسلامی کے دِینی ماحول سےوابستہ ہوجائیں ، آپ بھی ایسے ہوجائیں گے،عفوودَرگزرمیں ہی ترقی اورجینے کا مزہ ہے،شیطان کی تعلیمات کو ردکردو،اسلام کی تعلیمات کواپنالو،بیڑاپارہوجائےگا۔ ان شاۤء اللہ

سوال:توبہ کا مفہوم کیا ہے اورتوبہ کیسے کی جائے ؟

جواب: حدیثِ پاک میں ہے :"توبہ کرنے والاایساہے جیسے اس نے گناه کیا ہی نہیں(معجم كبير،10/150،رقم 10281) یعنی توبہ کرنے سے گنا ہ معاف ہوگئے ۔ توبہ کے 3 ارکان ہیں: (1)گناہ کودل سے تسلیم کرناکہ مجھ سے یہ غلط ہوگیا ہے۔(2)اُس پر شرمندہ ہوکررجوع کرلینا،توبہ کرنا (3)دِل میں یہ پکّا اِرادہ ہو کہ اب مجھے یہ گُناہ کرنا ہی نہیں ۔توبہ کے لیےیہ تینوں اَرکان ضروری ہیں ،ایک بھی کم ہوگاتو توبہ نہیں ہوگی ،بعض گناہوں میں توبہ کے ساتھ ساتھ تلافی بھی ضروری ہے مثلاًنمازقضا کی تو نمازکی قضا بھی ضروری ہے،بہرحال ہمیں پکی سچی توبہ کرنی چاہئے،الله پاک سے توبہ کرتے رہنا چاہئے۔بندہ ہروقت اِسْتِغْفارکرتارہے،اس سے پیچھے نہیں ہٹناچاہئے۔لَیْلَۃُ الْقَدرکی دُعاکتنی پیاری ہے : اَللّٰھُمَّ اِنَّکَ عَفُوٌّ تُحِبُّ الْعَفْوَ فَاعْفُ عَنِّی یعنی اے اللہ !تومعاف کرنے والاہے اورمعاف کرنے کو پسندکرتاہےمجھے بھی معاف کردے۔

سوال : درس ِنظامی جب مکمل ہوتاہے تو بسا اوقات کہاجاتاہے کہ’’ آج میری پڑھائی ختم ہورہی ہے‘‘ ،کیا واقعی پڑھائی ختم ہوجاتی ہے؟

جواب: پڑھائی ختم نہیں بلکہ شروع ہورہی ہوتی ہے،اب تو پڑھنے کی شُدبُد(تھوڑی سی قابلیت) پیداہوئی ہے کہ کیا پڑھنا ہے ؟عالم علم سے بنتاہے،دورۂ حدیث شریف کے بعدآپ یہ سمجھئے کہ اب آپ کے علم حاصل کرنے میں ابتداہوئی ہے،آپ کو آگے قدم بڑھاناہے ،اگرآپ تدریسی ٹیسٹ میں کامیاب ہوجاتے ہیں تو تدریس کیجئے، یہ بہت اچھا کام ہے ،اس سے علم باقی رہتاہے،علم وہ انوکھا خزانہ ہے جو خرچ کرنے سے بڑھتاجاتاہے،میراپسندیدہ تو تَخَصُّصْ فیِ الْفِقہ ہے،مجھے بچپن سے فقہی مسائل سے دلچسپی ہے،علم فقہ دیگرعلوم سے افضل بھی ہے،البتہ یہ ذہن میں رہے کہ تَخَصُّصْ فیِ الْفِقہ کرنے سے بندہ مفتی نہیں بنتا،مفتی بننےکے لیے مزیدشرائط ہیں۔

سوال :فقہی مسائل میں بعض اوقات زیادہ دلچسپی نہیں رہ پاتی اوریہ مسائل یادبھی نہیں رہتے ، اس کا کیا حل ہے ؟

جواب: یہ دماغی کام ہے ،اس میں دماغ بہت استعمال ہوتاہے ،پہلی بات یہ ہے کہ سرمیں تیل ڈالاجائے ،بغیراس کے دماغ کام کیسے کرے گا؟عالم کے لیے تیل بہت مفیدہے ،تیل سے دماغ کو تراوٹ ملتی ہے ،عقل ٹھکانے رہتی ہے،دِماغ کو قوت دینے والے غذائیں مثلاً بادام وغیرہ کا استعمال کریں،آرام برابرلیں ،نیندپوری نہیں ہوگی تو دماغ کام نہیں کرے گا،چِڑچڑاپن آجائے گا،مسائل یادنہیں رہیں گے،اپنی صحت کا خیال رکھیں ،کھانے پینے میں احتیاط کریں ،بھوک باقی ہوتو ہاتھ کھینچ لیں سادہ غذاکھائیں، مرغن غذاؤں سے بچیں،پیٹ خراب ہوگاتو دماغ کام نہیں کرے گا،نجی طورپر مُطالَعہ بھی کریں ،اپنے بُزرگوں کی کُتب کا مُطالعہ تو چھوڑنا ہی نہیں، محاورۃً"کتابیں چاٹتے رہنا ہے" ،علم کے سمندرمیں غوطے لگاتے رہنا ہے ،اعلیٰ حضرت امام احمدرضا خان رحمۃ اللہ علیہ کے قدموں سے لگے رہیں ،مطالعہ میں راجع مرجوع کے مسائل درپیش آئیں تو دارُالافتااَہلسنّت کے مفتیان ِکرام سے پوچھتے رہیں ،درخواست کرکےسمجھ لیں ،یہ ذہن بنا لیں کہ دل لگا کر زندگی بھرپڑھنا ہے ،حقیقت تویہ ہے کہ بندہ قبرتک طالب ِعلم رہتاہے۔

سوال: فارغُ التحصیل(درسِ نظامی مکمل ) ہونے کے بعد اِدھراُدھرکی مصروفیات میں لگ جاناکیسا؟

جواب:اپنے کام سے کام رکھیں ،دعوتِ اسلامی کےتحت دین کی خدمت کریں ،اگر رات کو2بجے تک تقریریں کرتے رہیں گے اورنیندپوری نہیں کریں گے تو مسائل ہوں گے ،سلیقہ مندتو وہی ہے کہ باپ نے جو دکان لگائی ہو اُسی میں مصروف رہے،یہ زیادہ مناسب ہے ،دعوتِ اسلامی آپ کی اپنی ہے ،اب آپ کی خدمت کی اسے زیادہ ضرورت ہے،اپنے علاقے کے دعوت ِاسلامی کے ذمہ داران کا ہاتھ بٹائیں ،یہ کوئی ذمہ داری دیں تو قبول کریں ،ان کے ساتھ مل کرکام کریں ،ان پرشفقتیں اوررہنمائیاں کرتے رہیں ،حکیمانہ اندازاختیارکریں ،عاجزی کاپیکربن کررہیں کیونکہ عاجزی سے ہی کام ہوگا،تکبر،حرص وطمع،بداخلاقی،جارحانہ اندازنہیں ہونا چاہئے ۔

سوال: اِس ہفتے کارِسالہ فيضان ِشعبان پڑھنے یاسُننے والوں کو امیرِاہلِ ِسُنّت دَامَتْ بَرَکاتُہُمُ الْعَالِیَہنے کیا دُعا دی ؟

جواب:یا ربَّ المصطفی ! جو کوئی رسالہ فيضانِ شعبان پڑھ یا سُن لے اُسے اپنے پیارے پیارے آخری نبی محمدِعربی صلَّی اللہ علیہ واٰلہٖ وسلَّم کے پیارے مہینے شعبانُ المعظم میں خوب عبادت کرنے کی توفیق عطافرمااوراُسے بے حساب بخش دے ۔اٰمِیْن بِجَاہِ النَّبِیِّ الْاَمِیْن صلَّی اللہ علیہ واٰلہٖ وسلَّم