23 جنوری 2021ء کی شب عالمی مدنی مرکز فیضانِ مدینہ میں ہفتہ وار مدنی مذاکرے کا سلسلہ ہوا جس میں بانیِ دعوتِ اسلامی حضرت علامہ مولانا محمدالیاس عطار قادری دَامَتْ بَرَکَاتُہُمُ الْعَالِیَہ نے عاشقانِ رسول کو علم و حکمت سے بھرپور مدنی پھول عطا فرمائے۔ عالمی مدنی مرکز فیضانِ مدینہ کراچی میں سینکڑوں جبکہ بیشتر مقامات ہزاروں عاشقانِ رسول نے جمع ہوکر اس مدنی مذاکرے میں شرکت کی سعادت حاصل کی۔

مدنی مذاکرے میں امیرِ اہلِ سنت نے پان گٹکاکھانےکےبارےمیں مدنی پھول دیتے ہوئے کہا کہ پان گٹکااچھی چیزنہیں ،اس سےبچنے میں ہی عافیّت ہے،پان میں چُونا بھی ہوتاہے، اس سے پتھری ہوجانے کا اندیشہ ہے ،لوگ منہ میں گٹکارکھ کرسوجاتے ہیں ،جس سےمنہ میں کینسرہونے کا اندیشہ ہوتا ہے۔

مدنی مذاکرے کےمزید مدنی پھول ملاحظہ فرمائیں

سوال:سناہے کہ دُعاقُبول ہونے کےلیے یہ یقین ہونا چاہئے کہ میری دُعاضرور قبول ہوگی ،یہ یقین کیسے حاصل ہو؟

جواب:بتکلُّف یقین بنانے کی کوشش کرے،اس کےساتھ علم بھی ہوناچاہئےکہ دُعاکی قُبولیّت کی کیاکیاصورتیں ہیں مثلاًدُعاکی قُبولیّت یہ بھی ہے کہ جو مانگامل جائے ،اس کے علاوہ بھی دُعاکی قُبولیّت کی صورتیں ہیں مثلاً دُعامانگی ،جومانگانہیں ملامگرکوئی نقصان ہونے والا تھادُعامانگنے کی برکت سے اُس نقصان سے بچ گیا،سب سے اعلیٰ دُعاکی قُبولیّت کی صورت یہ ہے کہ دُنیامیں جومانگانہ ملامگراُسے آخرِت میں ثواب کی صورت میں ذخیرہ کرلیاگیا۔

سوال: کیااسکوٹر(Motor Cycle)چلاتےہوئے نعت شریف پڑھ سکتےہیں ؟

جواب:جی ہاں!نعت شریف اورذکرواذکار پڑھ سکتے ہیں ۔

سوال:یَاحَیُّ یَاقَیُّوْمُ پڑھنے کی کیا برکات ہیں؟

جواب:اللہ پاک کا نام لینے میں برکت ہی برکت اورثواب ہی ثواب ہے، یَاحَیُّ یَاقَیُّوْمُ پڑھنے کی برکت سے مشکل آسان،آفت دُور،بیماری سے شِفااور فاصلے بھی سِمٹ جاتے ہیں ،یہ بہت ہی پیاراوِردہے،بُدھ اورجُمعرات کی درمیانی رات(6 جمادی الاخریٰ1442ھ)تھی ،مجھے اسلامی بھائیوں کے ہمراہ ائیرپورٹ سے گھرپہنچنا تھا،فجرکا وقت کم تھا ،دُھند(Fog)کی وجہ سے گاڑی چلانے والے نے کہاکہ میں آگے نہیں بڑھ سکتاکہ کچھ نظرنہیں آرہا ،پریشانی یہ تھی کہ نمازِ فجرکا وقت ختم ہونےوالاتھا ،کسی مقام پر وضو کرنے کاانتظام بھی مشکل تھا ،ہم نے مل کر یَاحَیُّ یَاقَیُّوْمُ کا وِردشروع کردیا ،حیرت انگیزطورپر دُھند (Fog) دُورہوگئی اورراستہ نظرآنےلگا،دوسری برکت یہ ظاہرہوئی کہ راستہ سمٹ گیا اورہم وقت پر گھرپہنچ گئے،اَلْحَمْدُلِلّٰہ نمازِفجرپڑھنے میں کامیاب ہوگیا ۔ ایک مرتبہ ہم حیدرآبادکی جانب آرہےتھے ،رات کافی گزرچکی تھی فاصلہ کافی تھا،حیدرآبادمیں ایک اسلامی بھائی نے سحری کا انتظام کیاہواتھا،وقت کم تھا ،اسی لیے پریشانی ہوئی کہ سحری نہیں کرسکیں گے ،اس پرمیں نےیہی وِرد کرناشروع کردیا یَاحَیُّ یَاقَیُّوْمُ ،اَلْحَمْدُلِلّٰہ راستہ سمٹ گیااورہم وقت پر حیدرآباد پہنچ گئے ،سُنّت ِسحری کی سعادت بھی نصیب ہوگئی ۔

سوال: دعوتِ اسلامی نوجوانوں کے لیے کیا مصروفیت مہیاکررہی ہے؟

جواب: دعوتِ اسلامی یوں تو بچوں ،بوڑھوں اورتمام عمرکے لوگوں میں دِینی کام کرتی ہے لیکن غالب اکثریت نوجوانوں پر مشتمل ہے ،ان کے لیے ہفتہ واراجتماع میں شرکت،مدنی قافلوں میں سفر،نیک اعمال پرعمل ،جامعۃ المدینہ ،مدرسۃ المدینہ ،مدرسۃ المدینہ بالغان اورکئی طرح کے کورسز ہیں جن میں نوجوان داخلہ لے سکتے ہیں ،بعض نوجوانوں میں قِیادت(Leadership) کی صلاحیت ہوتی ہے ،گفتگومیں ٹھہراؤ ہوتاہے، ان پر زیادہ کوشش کرنی چاہئے کہ یہ راہِ سنت پر آجائیں کیونکہ اگریہ دعوتِ اسلامی میں مکمل آجائیں تو دِین کا کام کافی بڑھ سکتاہے۔یادرکھئے! دِین کے لیے جوکام کرتاہے ،دنیا میں بھی وہ بہترزندگی گزارتاہے ،ان شاء اللہ !آخرت بھی سنور جائے گی ،دین کاکام کرنے سے دنیانہیں چُھوٹتی، گناہ چُھوٹتے ہیں ۔

سوال: ہمیں کون سی کِتابوں کا مُطالَعہ کرنا چاہئے ؟

جواب:ہمارے مُعاشرے میں فقہی وشرعی مسائل کے مُطالَعے کا شوق کم ہے ،ضروری شرعی احکام سب کوسیکھنےچاہئیں،میرامشورہ ہے کہ بہارِشریعت اورجس سے ہوسکےفتاویٰ رضویہ کا مُطالَعہ کریں ،عقائدکا علم حاصل کرنا سب سے ضروری ہے،اس کے لیے بہارِشریعت کا پہلاحصہ اورمکتبۃ المدینہ کی کتاب ’’کفریہ کلمات کے بارے میں سوال جواب‘‘ کا مُطالَعہ کریں بلکہ گھول کرپی لیں ،جتنا علم ِدین حاصل کرسکتے ہیں حاصل کریں ۔

سوال:لوگوں کو انگریزی مہینوں کی معلومات تو ہوتی ہیں مگراسلامی مہینوں کی نہیں ،اس کے بارے میں آپ کیا فرماتے ہیں ؟

جواب:افسوس !آج عام طورپر لوگوں کو سب معلوم ہےمگراسلام کےبارے میں معلومات نہیں ،بہت بُری حالت ہے،اسلامی معلومات کی بہت کمی ہے، اسلامی مہینوں اوراسلامی سال کی معلومات ہونی چاہئیں ،تمام اسلامی تہوار(مثلاً حج،زکوٰۃ کی ادائیگی،قربانی وغیرہ)اسلامی سال کے مطابق ہوتے ہیں مگرہمیں یہ معلوم نہیں ہوتے،انگلش مہینے،سال اورتاریخ معلوم ہوتی ہے بلکہ اسلامی مہینوں کے نام بولنے بھی نہیں آتے ،مکتبۃ المدینہ نے اسلامی کلینڈرشائع کیا ہے اس میں اسلامی اورانگلش دونوں تاریخیں لکھی ہوئی ہیں اسے لیں ،اسے دیکھتے رہنے سے اسلامی تاریخوں اورمہینوں کی معلومات ہوتی رہیں گی ،مکتبۃ المدینہ کی کتاب ’’اسلامی مہینوں کےفضائل ‘‘لےلیں ،اس میں 12 مہینوں کے فضائل ہیں ،بہت پیاری کتاب ہے ،پڑھنے والی ہے ،ہرگھرمیں ہونی چاہئے۔

سوال: دعوتِ اسلامی کا دِینی کام کب شروع ہوا؟

جواب:دعوتِ اسلامی کا دِینی کام 1401ھ مطابق 1981ءمیں شروع ہوا ،جب سے دعوتِ اسلامی بنی ہے کبھی ایک سیکنڈکے لیے بھی پیچھے نہیں ہٹی بلکہ آگے ہی بڑھتی جارہی ہے۔

سوال: اگر کسی دن یہ نیّت کی کہ میرافُلاں کام ہوگیا تو میں فُلاں بُزرگ کےمزارپر جاؤں گا پھروہ نہیں گیا تو کیسا؟

جواب: جانا چاہئے ورنہ بے برکتی ہوسکتی ہے ۔

سوال: اِس ہفتے کارِسالہ’’ شانِ صدیق اکبر‘‘پڑھنے یاسُننے والوں کو امیرِاہلِ ِسُنّت دَامَتْ بَرَکاتُہُمُ الْعَالِیَہنے کیا دُعا دی ؟

جواب:یااللہپاک! جو کوئی 17 صفحات کا رسالہ ’’ شانِ صدیق اکبرپڑھ یا سُن لے،اُس کو بے حساب بخش کر جنت الفردوس میں حضرت صدیق اکبر رضی اللہ عنہ کا پڑوس عطا فرما ۔اٰمِیْن بِجَاہِ النَّبِیِّ الْاَمِیْن صلَّی اللہ علیہ واٰلہٖ وسلَّم


16جنوری 2021ء کی شب عالمی مدنی مرکز فیضان مدینہ کراچی سے براہ راست مدنی چینل پر مدنی مذاکرے کا انعقاد کیا گیا جس میں کثیر تعداد میں عاشقان رسول نے شرکت کی۔

مدنی مذاکرے میں شیخِ طریقت حضرت علامہ محمد الیاس عطار قادری دَامَتْ بَرَکَاتُہُمُ الْعَالِیَہ نے علم و حکمت سے بھرپور مدنی پھول ارشاد فرمائے۔

مدنی مذاکرے کے چند مدنی پھول ملاحظہ کریں:

سوال:کیا لفظ"اللہ" پڑھ کر کسی کودم کریں تو اس سے فائدہ ہوتاہے؟

جواب: جی ہاں ! الفاظ میں بھی اثرہوتاہے ،اللہ پاک کانام لے کریا قرآنِ کریم پڑھ کرکسی کودم کریں تو اس کی برکت بھی حاصل ہوگی ۔

سوال: گھرمیں پھل یا کھلونے(Toys) لائیں توکیا کریں ؟

جواب: چھپا کر لائیں تاکہ غریب ہمسائےکے بچے ضد کرکے اپنے ماں باپ کو تنگ نہ کریں ،یوں ہمسائے کوتکلیف نہ ہو،مگرآجکل تو لوگ اپنی چیزوں کی نمائش کرتے اوراپنے گھروں کو سجاتے ہیں۔ہوٹل میں جائیں تو جیب سے نیانوٹ نکالیں گے ،اللہ کرےہمیں قناعت کی دولت ملے اورسادگی نصیب ہو۔

سوال: کسی مسلمان کی بُرائی کرنے میں کیانقصان ہے؟

جواب:کسی مسلمان کی بُرائی کرنے میں کوئی فائدہ نہیں ،یہ بہت بُری عادت ہے،یہ غیبت بھی ہے جوکہ بہت بڑاگُناہ ہے ، اس کی بہت تباہ کاریاں ہیں ،جس کی بُرائی کی جائے ،اس کے اوراس کی اولاد کے دل میں بُرائی کرنے کی نفرت پیداہوجاتی ہے ،اس بُری عادت کی وجہ سے دلوں میں کینہ، نفرت،بغض اورکئی بُرائیاں پیداہورہی ہیں ۔

سوال: نمازمیں چھینک کس کی طرف سے ہے؟

جواب: نمازمیں چھینک آنا شیطان کی طرف سے ہے۔

سوال:لوگوں کےسامنے کانوں میں اُنگلیاں ڈالناوغیرہ ایسی عادات کے بارے میں آپ کیا فرماتے ہیں ؟

جواب:لوگوں کےسامنے کانوں میں اُنگلیاں ڈالنا،باربارناک صاف کرناوغیرہ ایسی عادتوں سےعزّت و وقارمیں کمی واقع ہوتی ہے ،اس سے دوسروں کو گِھن بھی آتی ہے ،اگرکسی کی عادت بن گئی ہوتو سنجیدہ ہوکراسے نکالنے کی کوشش کرے۔

سوال:دعوتِ اسلامی کی ابتدامیں جب آپ کاوفد(Delegation) دیگرشہروں میں جاتاتھا تو آپ کہاں ٹھہرتے تھے؟

جواب:جب دعوتِ اسلامی شروع ہوئی تو ہم عاشقانِ رسول کےدارالعلوم اورمدارس میں ٹھہرتے تھے،پشاور(یکہ توت)میں پیرمحمدچشتی صاحب کے مدرسے میں، سکھرمیں مولانا محمدحسین رضوی صاحب کے مدرسے میں اورسیالکوٹ میں بھی کسی مدرسے میں ۔یہ اسلام کے قلعے ہیں ،ان کی آن بان شان ہے، معاشرے سےانہیں نکالا نہیں جاسکتا،ان دارالعلوم،مدارس و جامعات میں علمااورائمہ بنائے جاتے ہیں اگریہ ختم ہوجائیں توقوم کو مساجدکے ائمۂ کرام کیسے مل سکیں گے؟ لوگوں کوان کے ساتھ مالی تعاون کرنا چاہئے۔اللہ پاک انہیں مزیدآبادفرمائے۔

سوال:فتاویٰ رَضویہ پڑھنے کے لیے کیاکرناچاہئے ؟

جواب:جس نے فتاویٰ رَضویہ کی تیس جلدیں(30 Volumes) پڑھیں تواُس نےکمال کیا ،ابتدامیں وہ جِلدیں پڑھیں جو روزمرہ کے مسائل پر مشتمل ہیں( جسے عربی میں الْحَضْرُوَالْاِبَاحَۃکیا جاتاہے ۔فتاوٰی رضویہ کی جلد21تا24انہی مسائل پرمشتمل ہے)مطالَعہ کے ساتھ ساتھ علماسےپوچھنے کی حاجت ہوگی ،بلکہ کوئی بھی مسائل کی کتاب ہواس کوپڑھنے کے ساتھ ساتھ علماسے رابطہ ضروری ہے ،علماسے پوچھ پوچھ کر آگے بڑھیں۔

سوال: اِس ہفتے کارِسالہ’’صابر بوڑھا‘‘پڑھنے یاسُننے والوں کو امیرِاہلِ ِسُنّت دَامَتْ بَرَکاتُہُمُ الْعَالِیَہنے کیا دُعا دی ؟

جواب:یا ربَّ المصطفٰے! جو کوئی 17 صفحات کا رسالہ ” صابِر بوڑھاپڑھ یا سُن لے اسے مصیبتوں پر صبر کرنے کا حوصلہ عطافرما، اس کو پُل صراط سے سلامتی کے ساتھ گزار اور اس کی بے حساب مغفرت فرما۔اٰمِیْن بِجَاہِ النَّبِیِّ الْاَمِیْن صلَّی اللہ علیہ واٰلہٖ وسلَّم

علم کی مجلس میں حاضر ہونا ہزار رکعت نَفْل پڑھنے، ہزار جنازوں میں شرکت کرنے اور ہزار مریضوں کی عیادت کرنے سے بہتر ہے۔ (احیاء العلوم مترجم جلد 1،ص136) ۔مدنی مذاکرہ بھی علم دین حاصل کرنے کا بہترین ذریعہ ہے ۔

اسی سلسلے میں آج رات 8:30 بجےمدنی چینل پر براہ راست ہفتہ وار مدنی مذاکرے کا سلسلہ ہوگا جس میں بانیِ دعوتِ اسلامی حضرت علامہ محمد الیاس عطار قادری دَامَتْ بَرَکَاتُہُمُ الْعَالِیَہ عاشقانِ رسول کی جانب سے پوچھے گئے سوالات کے جوابات ارشاد فرمائیں گے

واضح رہے کہ مدنی مذاکرے میں امیرِ اہلِ سنت دَامَتْ بَرَکَاتُہُمُ الْعَالِیَہ فقہی سوالات کے جوابات، علم و حکمت سے لبریز مدنی پھول اور اپنے ذاتی تجربات کی روشنی میں روز مرہ کے مسائل پر تفصیلی گفتگو فرماتے ہیں۔

عاشقانِ رسول سے گزارش ہے کہ مدنی مذاکرے میں اول تا آخر شرکت فرمائیں اور علمِ دین کی روشنی سے اپنے سینوں کو منور کریں۔


دعوتِ اسلامی کے زیرِ اہتمام ہر ہفتے کی رات کو برد نمازِ عشاء ہفتہ وار مدنی مذاکرے کا سلسلہ ہوتا ہے جس میں بانیِ دعوتِ اسلامی حضرت علامہ مولانا محمدالیاس عطار قادری دَامَتْ بَرَکَاتُہُمُ الْعَالِیَہاپنے قیمتی ملفوظات عطا فرماتے ہیں۔

اسی سلسلے میں آج رات تقریباً ساڑھے نو بجے مین یونیورسٹی روڈ کراچی پر واقع عالمی مدنی مرکزفیضانِ مدینہ میں ہفتہ وار مدنی مذاکرے کا آغاز ہوجائے گا جس میں امیرِ اہلِ سنت دَامَتْ بَرَکَاتُہُمُ الْعَالِیَہ عاشقانِ رسول کے سوالات کے حکمت بھرے جوابات ارشاد فرمائیں گے۔

تمام عاشقانِ رسول سے گزارش ہے کہ مدنی مذاکرے میں شرکت کرکے علم دین کا ڈھیروں ڈھیر خزانہ حاصل کریں۔ 


2 جنوری 2021ء کی شب عالمی مدنی مرکز فیضانِ مدینہ میں ہفتہ وار مدنی مذاکرے کا سلسلہ ہوا جس میں بانیِ دعوتِ اسلامی حضرت علامہ مولانا محمدالیاس عطار قادری دَامَتْ بَرَکَاتُہُمُ الْعَالِیَہ نے عاشقانِ رسول کو علم و حکمت سے بھرپور مدنی پھول عطا فرمائے۔ عالمی مدنی مرکز فیضانِ مدینہ کراچی میں سینکڑوں جبکہ بیشتر مقامات ہزاروں عاشقانِ رسول نے جمع ہوکر اس مدنی مذاکرے میں شرکت کی سعادت حاصل کی۔

مدنی مذاکرے میں امیرِ اہلِ سنت نے مدنی پھول دیتے ہوئے کہا کہ ہرمسلمان کا دل اورعزتِ نفس ہوتی ہے، اس لیے مسلمان کا ادب کرنا چاہئےوہ چاہےغریب ہویا امیر،کسی کا بھی دل نہیں توڑنا چاہئے اورعزتِ نفس کو ٹھیس نہیں پہنچانی چاہئے۔

انہوں نے مزید کہا کہ لوگوں سےمختلف چیزیں باربار مانگنے سےعزّت کم ہوتی ہے، یہ عادت ہوتو نکال دینی چاہئے ۔

مدنی مذاکرے کےمزید مدنی پھول ملاحظہ فرمائیں

سوال: کہا جاتاہے کہ کسی کو گھرکا نمک نہیں دینا چاہئے، اس سےرزق میں کمی واقع ہوتی ہے ،کیا یہ بات دُرست ہے ؟

جواب: یہ بات دُرست نہیں ،بلکہ حدیثِ پاک میں تونمک دینے کی ترغیب آئی ہے۔اُمُّ المؤمنین حضرت ِعائشہرضی اللہ عنہانے سوال کیا: یا رسول اﷲ (صلی اللہ علیہ وسلم)! وہ کون سی چیز ہے جس سے اِنکار کرنا جائز نہیں۔فرمایا: پانی ،نمک اور آگ۔ کہا: یا رسول اﷲ(صلی اللہ علیہ وسلم)! پانی کی بات تو سمجھ میں آتی ہے۔ نمک اور آگ کا کیا مُعامَلہ ہے؟آپ نے جواب فرمایا: حمیرا(حضرت عائشہ کا لقب)!جس نے آگ دے دی، گویا اس نے آگ سے پکانے والی ہرچیز دے دی۔جس نے نمک دیا ، گویا اس نے نمک کا ذائقہ رکھنے والی تمام اشیا دے دِیں۔جس نے کسی مسلمان کو پانی پلایا،ایسی جگہ پر جہاں پانی موجود تھا ،گویا اس نے ایک غلام آزاد کیا اورجس نے مسلمان کو پانی پلایا،ایسی جگہ جہاں پانی موجودہی نہ تھا ،گویا اس نے اسے زندگی بخشی۔ (ابن ماجہ، رقم 2474)

سوال: سردیوں میں ویزلین (vaseline) لگائی جاتی ہے ،اس کو لگاتے ہوئے کیا نیت کرنی چاہئے ۔

جواب: سردیوں میں پاؤں کی ایڑیاں وغیرہ پھٹ جاتی ہیں ،اس کے علاج کی نیت کرنی چاہئے کہ علاج کرنا سنت ہے ،اسی طرح عبادت پر قوت حاصل کرنے کی نیت بھی ہوسکتی ہے۔

سوال: پُراَمن رہنے کے کیا فوائدہیں ؟

جواب: ہم پُراَمن ہوجائیں ،اپنے ملک کی چیزوں کی حفاظت کریں تو سکون ہوگا،عبادت کا ذوق شوق بھی بڑھ جائےگا ،کاش !ہم سب اَمن سے جینا سیکھ جائیں ۔

سوال: کن چیزوں کو دیکھنا عبادت ہے ؟

جواب: حدیثِ پاک میں ہے : پانچ(5) چیزیں عبادت میں شامل ہیں:(1) کم کھانا(2) مسجد میں بیٹھنا(3) کعبہ کو دیکھنا(4) قرآنِ کریم دیکھنا(5) اور عالم کے چہرے کو دیکھنا۔(دیلمی شریف،195/2)

سوال: اِس ہفتے کارِسالہ’’ سردی کے بارے میں دلچسپ معلومات ‘‘پڑھنے یاسُننے والوں کو امیرِاہلِ ِسُنّت دَامَتْ بَرَکاتُہُمُ الْعَالِیَہنے کیا دُعا دی ؟

جواب: یا اللہ پاک!جو کوئی 17 صفحات کا رسالہ ”سردی کے بارے میں دلچسپ معلومات “ پڑھ یا سُن لے اس کو جہنم کے ہر عذاب خُصوصاً جہنم کے ٹھنڈک کے شدید عذاب سے بچاکر جنتُ الفردوس میں بے حساب داخلے سے نواز دے۔اٰمِیْن بِجَاہِ النَّبِیِّ الْاَمِیْن صلَّی اللہ علیہ واٰلہٖ وسلَّم

علم کی مجلس میں حاضر ہونا ہزار رکعت نَفْل پڑھنے، ہزار جنازوں میں شرکت کرنے اور ہزار مریضوں کی عیادت کرنے سے بہتر ہے۔ (احیاء العلوم مترجم جلد 1،ص136) ۔مدنی مذاکرہ بھی علم دین حاصل کرنے کا بہترین ذریعہ ہے ۔

اسی سلسلے میں آج رات 8:30 بجےمدنی چینل پر براہ راست ہفتہ وار مدنی مذاکرے کا سلسلہ ہوگا جس میں بانیِ دعوتِ اسلامی حضرت علامہ محمد الیاس عطار قادری دَامَتْ بَرَکَاتُہُمُ الْعَالِیَہ عاشقانِ رسول کی جانب سے پوچھے گئے سوالات کے جوابات ارشاد فرمائیں گے

واضح رہے کہ مدنی مذاکرے میں امیرِ اہلِ سنت دَامَتْ بَرَکَاتُہُمُ الْعَالِیَہ فقہی سوالات کے جوابات، علم و حکمت سے لبریز مدنی پھول اور اپنے ذاتی تجربات کی روشنی میں روز مرہ کے مسائل پر تفصیلی گفتگو فرماتے ہیں۔

عاشقانِ رسول سے گزارش ہے کہ مدنی مذاکرے میں اول تا آخر شرکت فرمائیں اور علمِ دین کی روشنی سے اپنے سینوں کو منور کریں۔


26دسمبر 2020ءکی شب عالمی مدنی مرکز فیضان مدینہ کراچی سے براہ راست مدنی چینل پر مدنی مذاکرے کا انعقاد کیا گیا جس میں کثیر تعداد میں عاشقان رسول نے شرکت کی۔

مدنی مذاکرے میں شیخِ طریقت حضرت علامہ محمد الیاس عطار قادری دَامَتْ بَرَکَاتُہُمُ الْعَالِیَہ نے علم و حکمت سے بھرپور مدنی پھول ارشاد فرمائے۔

مدنی مذاکرے کے چند مدنی پھول ملاحظہ کریں:

سوال:اگر کسی پریشانی کی وجہ سے غُصّہ آئے اور چِڑچڑا پَن محسوس ہوتو اس سے بچنے کا کیاطریقہ ہے؟

جواب: کوئی بھی پریشانی آئے تو غُصّہ اور جھگڑا کرنے کے بجائے صبر کیا جائے ، غُصّہ و جھگڑا کرنے سے دنیا کی تکلیف تو دُور نہیں ہوگی مگر آخرت برباد ہوسکتی ہے، جہنم کا ایک دروازہ ان لوگوں کے لیے مخصوص ہے یعنی وہ اس دروازے سےجہنم میں جائیں گے جن کا غُصّہ گناہ کے بعد ہی ٹھنڈا ہوتا ہے، غُصّے اورچڑچڑے پن سے بچنے کے لیے روزانہ ’’یَا قَہَّارُ ‘‘100بار پڑھنے کا معمول بنالیں۔

سوال: بعض لوگ کرونا کی بیماری کو سنجید ہ نہیں لے رہے ،ایس اوپیز(SOPs) کا خیال نہیں رکھتے، آپ اس بارے میں کیا فرماتے ہیں؟

جواب: لوگوں کو واقعی کرونا کا مرض ہورہا ہے،میرے پاس جو دعاکے پیغامات آتے ہیں، ان میں کرونا کےمریضوں کی تفصیلات بھی ہوتی ہیں، تقریبا ً روزانہ ہی پیغامات آرہے ہیں ۔اللہ پاک سے عافیت مانگنی چاہیے اوراسےسنجیدہ لینا چاہیے، اس کی تکلیف وہی محسوس کرسکتا ہے جسے کرونا ہوگیا ہو۔

سوال: وبائی مرض سے بچنے کا کوئی اور ورد بتادیجئے۔

جواب: ’’اَلْحَکِیْمُ‘‘ 88 بار روزانہ پڑھا کریں، یہ وبائی مرض سے بچنے کا وِرد ہے،کرونا بھی وبائی مرض ہے۔

سوال:پھول(Flowers) کہاں اچھے لگتے ہیں؟

جواب: پھول گملے (Flowerpot)میں ہی اچھے لگتے ہیں۔

سوال: حقیقی دعوتِ اسلامی والاکون ہے ؟

جواب: جو دعوتِ اسلامی میں دل و جان سے آجاتا ہے، ہفتہ وار اجتماع اورمدنی مذاکرے میں پابندی سے شرکت کرتاہے،ہرماہ 3 دن کےمدنی قافلے کا مسافربنتاہے ،نیک اعمال کے رسالے کے مطابق عمل کرتا ہے، ذیلی حلقے کے 12 دینی کاموں میں رچا بسا رہتا ہےوہی حقیقی دعوتِ اسلامی والاہے ۔

سوال: لوگوں کے درمیان کن باتوں سے بچنا چاہیے؟

جواب: محاورہ ہے کہ کھاؤ مَن بھاتا ،پہنو جگ بھاتا، بعض کام گھر میں کرسکتے ہیں مگر لوگوں کے سامنے نہیں کرنے چاہئیں، جیسے وہ کام جو تنفیرِ عوام (لوگوں کی نفرت)کا باعث ہوں ،لوگ اچھا نہ سمجھتے ہوں۔

سوال:مسلمان کیسے کام کرتا ہے؟

جواب: مسلمان خود بھی سلامتی والے کام کرتا ہے اور دوسروں کو بھی اُن کاموں سے بچاتا ہے جن سے وہ شر میں مبتلا ہوں۔

سوال:ہرماہ کی گیارہویں(11ویں) رات آپ کیا کرتے ہیں؟

جواب:میری کوشش ہوتی ہے کہ ہر ماہ کی گیارہویں(11ویں) رات حضور غوث ِپاک حضرت شیخ عبدالقادرجیلانی رحمۃ اللہ علیہ کی فاتحہ کی جائے، آپ بھی اپنے گھروں میں اس کا معمول بنائیں۔

سوال: لاک ڈاؤن کی وجہ سےروزگاروغیرہ کے مسائل بھی ہیں ،کچھ مدنی پھول عنایت فرما دیجئے تاکہ پریشانی کم ہو۔

جواب: اللہ پاک بھوکا اُٹھاتا ہے مگر بھوکا سُلاتا نہیں ہے، مخلوق کو ر زق دینا اللہ پاک نے اپنے ذِمّہ کرم پر لیا ہواہے،پارہ 12سُورۂ ھُود کی آیت نمبر6 میں ارشاد ہوتاہے وَ مَامِنْ دَآبَّةٍ فِی الْاَرْضِ اِلَّا عَلَى اللّٰهِ رِزْقُهَا۔ ترجمۂ کنزُالایمان:"اور زمین پر چلنے والا کوئی ایسا نہیں جس کا رزق اللہ کے ذِمّۂ کرم پر نہ ہو"۔اس لیے پریشان ہونےکے بجائے رزقِ حلال کے تلاش کی کوشش کریں ،اپنے اخراجات کم کریں اور اللہ پاک سے دعاکریں ۔

سوال: غیر شرعی اورغیرقانونی انداز سے خوشی منانے والوں کو آپ کیا فرماتے ہیں؟

جواب: بسااوقات لمحہ بھر کی خوشی طویل غم کا باعث ہوتی ہے، مثلاً شادی میں کی جانے والی ہوائی فائرنگ سے کسی کو کوئی گولی لگ جائے تو وہ زندگی بھر کے لیے غم کا باعث ہوجاتی ہے۔

سوال: اِس ہفتے کارِسالہ’’شانِ رفاعی‘‘پڑھنے یاسُننے والوں کو امیرِاہلِ ِسُنّت دَامَتْ بَرَکاتُہُمُ الْعَالِیَہنے کیا دُعا دی ؟

جواب:یا اللہ پاک! جو کوئی رسالہ’’شانِ رفاعی‘‘کے 17 صفحات پڑھ یا سُن لے،اُس کو حضرت شیخ سیّد احمد کبیر رفاعی کا فیضان نصیب فرما اور اُسے بے حساب بخش دے۔اٰ مِیْن بِجَاہِ النَّبِیِّ الْاَمِیْن صلَّی اللہ علیہ واٰلہٖ وسلَّم


علم کی مجلس میں حاضر ہونا ہزار رکعت نَفْل پڑھنے، ہزار جنازوں میں شرکت کرنے اور ہزار مریضوں کی عیادت کرنے سے بہتر ہے۔ (احیاء العلوم مترجم جلد 1،ص136) ۔مدنی مذاکرہ بھی علم دین حاصل کرنے کا بہترین ذریعہ ہے ۔

اسی سلسلے میں آج رات 8:30 بجےمدنی چینل پر براہ راست ہفتہ وار مدنی مذاکرے کا سلسلہ ہوگا جس میں بانیِ دعوتِ اسلامی حضرت علامہ محمد الیاس عطار قادری دَامَتْ بَرَکَاتُہُمُ الْعَالِیَہ عاشقانِ رسول کی جانب سے پوچھے گئے سوالات کے جوابات ارشاد فرمائیں گے۔

واضح رہے کہ مدنی مذاکرے میں امیرِ اہلِ سنت دَامَتْ بَرَکَاتُہُمُ الْعَالِیَہ فقہی سوالات کے جوابات، علم و حکمت سے لبریز مدنی پھول اور اپنے ذاتی تجربات کی روشنی میں روز مرہ کے مسائل پر تفصیلی گفتگو فرماتے ہیں۔

عاشقانِ رسول سے گزارش ہے کہ مدنی مذاکرے میں اول تا آخر شرکت فرمائیں اور علمِ دین کی روشنی سے اپنے سینوں کو منور کریں۔


19دسمبر 2020ءکی شب عالمی مدنی مرکز فیضان مدینہ کراچی سے براہ راست مدنی چینل پر مدنی مذاکرے کا انعقاد کیا گیا جس میں کثیر تعداد میں عاشقان رسول نے شرکت کی۔

مدنی مذاکرے میں شیخِ طریقت حضرت علامہ محمد الیاس عطار قادری دَامَتْ بَرَکَاتُہُمُ الْعَالِیَہ نے علم و حکمت سے بھرپور مدنی پھول ارشاد فرمائے۔

مدنی مذاکرے میں گفتگو کرتے ہوئے آپ نے فرمایا: جب نمازکی اذان ہوجائے تو ہمیں نمازکی تیاری میں مصروف ہوجانا چاہئے،ہمارے گھرمیں مسجدکا ساماحول ہو،ہمارے بزرگوں کے گھروں کا یہی حال تھا ،مثلاًجب اذان ہوتی تو مُفسّرِ قرآن مفتی احمدیارخان صاحب رَحْمَۃُ اللہِ عَلَیْہ کے گھر سنّاٹاہوجاتا،مرد مسجدکی جانب روانہ ہوجاتے اورگھروالے نمازکی تیاری میں مصروف ہوجاتے ۔

انہوں نے مزید کہا کہ اِحسان کرنا اچھا ہے ،اللہ پاک اِحسان کرنے والے کودوست رکھتاہے،اللہ پاک کی رِضا کے لیے کسی پر اِحسان کرناچاہئے ،اِحسان کرکے جتایا نہ جائے کہ اِحسان جتانے سے جس پر اِحسان کیا ہواُس کی دل آزاری اوراِیذا(تکلیف)ہوتی ہے،جس پر اِحسان کیاگیا ہواُسے اِحسان کرنے والے کا شکریہ اداکرنا چاہئے ۔

مدنی مذاکرے کے دیگر چند مدنی پھول بھی سوالاً جواباً ملاحظہ کیجئے

سوال: بچے پھلوں اورسبزیوں کی طرف رغبت کریں ،اس کے لیے کیا طریقہ اختیار کیا جائے ؟

جواب: پھل اور سبزیاں صحت کے لیے بہت ہی مفیدہیں اوربیماریوں سے حفاظت کا باعث ہیں ،علاج بھی غذاکے ذریعے ہونا بہترہے جہاں دوا کام نہ دے وہاں پھل اورسبزیوں سے علاج کارگرہوتاہے ،بچوں کو چاکلیٹ اورٹافیاں نہ کھلائی جائیں کیونکہ ان سے بھوک مرجاتی ہے ،جتنا ممکن ہوان چیزوں سے بچوں کوبچائیں ،خودبھی بچیں ،پھل کھانے کے فوائدکیسے ہوتے ہیں آپ تجربہ کرکے دیکھ لیں ،جب آپ کو تھکاوٹ ہوتو ایک کیلاکھا لیں ان شاء اللہ آپ کی تھکاوٹ دُورہوجائے گی ۔

سوال:خون (Blood)کی کمی ہوتوکون سا وظیفہ کیاجائےکہ خون بڑھ جائے؟

جواب:دُرُودِتاج دن میں کم ازکم 1 باریا 3 بارپڑھ کر پانی پر دَم کرکے پی لیں، تاحصولِ شفااس طرح کرتےرہیں ، کچھ ہی دن بعدرزلٹ بہتر آجائے گا۔ اِنْ شاۤء اللہ۔(دُرودِ تاج مکتبۃ المدینہ کی کتاب مدنی پنج سورہ کے صفحہ نمبر 176پر ملاحظہ کیجئے)

سوال: بیان وغیرہ میں مکتبۃ المدینہ کی مختلف کتب و رسائل کی ترغیب دلاتے ہوئے کیا حکمتِ عملی اختیارکی جائے؟

جواب: ہوناتویہ چاہئے کہ سارے کا سارامکتبۃ المدینہ گھرمیں سماجائے مگر لوگوں کی موجودہ حالت کو پیشِ نظررکھتے ہوئے ایک وقت میں ایک ہی چیزکی بھرپور ترغیب دلائی جائے ،اگرایک وقت میں دوتین چیزوں کی ترغیب دلائیں گے تو ہوسکتاہے کہ سننے والےاُلجھاؤ(Confusion) کا شکارہوجائیں اورتینوں کو نہ لیں ۔

سوال:مریض ناسازحالت میں کیاپڑھے ؟

جواب:چالیس (40)مرتبہ آیتِ کریمہ لَاۤ اِلٰـهَ اِلَّاۤ اَنْتَ سُبْحَانَكَ اِنِّيْ كُنْتُ مِنَ الظَّالِمِيْنَ پڑھ لے ،زبان نہ چلے تو دل ہی دل میں اللہ پاک کو یادکرتارہے ۔

سوال:بعض اوقات بیماری میں مالی صدقہ کرنے کا ذہن بنتاہے ،آپ کیا فرماتے ہیں بیماری میں ہی صدقہ کردینا چاہئے یا شفاہونے کے بعدکرنا چاہئے؟

جواب:مالی صدقہ نفس کو بہت گِراں یعنی مشکل ہوتاہے ،اس لیے جیسے ہی نیّت اورذہن بنے تو فوراًمالی صدقہ کرڈالنا چاہئے ۔

سوال: اِس ہفتے کارِسالہ” وضو کا ثواب “پڑھنے یاسُننے والوں کو امیرِاہلِ ِسُنّت دَامَتْ بَرَکاتُہُمُ الْعَالِیَہ نے کیا دُعا دی ؟

جواب:یا اللہپاک! جو کوئی رسالہ ” وضو کا ثواب “ کے 17 صفحات پڑھ یا سُن لے اس کا نامۂ اعمال گناہوں سے پاک کردے۔ اٰمِیْن بِجَاہِ النَّبِیِّ الْاَمِیْن صلَّی اللہ علیہ واٰلہٖ وسلَّم


12دسمبر 2020ءکی شب عالمی مدنی مرکز فیضان مدینہ کراچی سے براہ راست مدنی چینل پر مدنی مذاکرے کا انعقاد کیا گیا جس میں عالمی مدنی مرکز کے گرد و نواح میں رہنے والے عاشقانِ رسول سمیت کثیر تعداد میں عاشقان رسول نے شرکت کی۔

مدنی مذاکرے میں شیخِ طریقت حضرت علامہ محمد الیاس عطار قادری دَامَتْ بَرَکَاتُہُمُ الْعَالِیَہ نے علم و حکمت سے بھرپور مدنی پھول ارشاد فرمائے۔

مدنی مذاکرے میں گفتگو کرتے ہوئے آپ نے فرمایا: جس طرح فضول بات کرنے سے بچناچاہئے ،اسی طرح فضول سوچوں سےبھی بچنا چاہئے،جس طرح گناہ والی بات سےبچناضروری ہے ،اسی طرح گناہ والی سوچوں سےبھی بچناضروری ہے ۔

انہوں نے مزید کہا کہ اللہ پاک خوشی دےمثلاًشادی ہوتو فائرنگ نہیں کرنی چاہئے،گھروں میں سوئے ہوئے بچےچونک کر اُٹھ جاتے ہوں گے ،مریض پریشان ہوتے ہوں گے، ایسی حرکتیں کرنے سے اللہ پاک کی رحمت نہیں آتی ،بلکہ گھرمیں بے سکونی آتی ہے ،ایسی باتوں سے بچنا چاہئے ۔

مدنی مذاکرے کے دیگر چند مدنی پھول بھی سوالاً جواباً ملاحظہ کیجئے

سوال:سائل(فقیر/مانگنے والے )کو کچھ نہ دینا ہوتوکن الفاظ میں منع کیا جائے؟

جواب:حُسنِ اخلاق کادامن نہیں چھوڑناچاہئے ،حکمتِ عملی سے یہ کہہ دیں" معاف کردیں

سوال:جوشبِ جمعہ (جمعرات اور جمعہ کی درمیانی رات )یا جمعہ کے دن فوت ہوتوکیا وہ عذابِ قبرسے بچ جاتاہے؟

جواب:جی ہاں!فرمانِ مصطفی(صلی اللہ علیہ والہ وسلم):جومسلمان جمعہ کے دن یا جمعہ کی رات میں مرے گا،اللہ پاک اُسے فتنۂ قبرسے بچالےگا۔ (ترمذی،2/399،حدیث نمبر1076)ایک اورحدیث پاک ہے :جوجمعہ کے دن یا جمعہ کی رات مرے گا،عذاب ِقبرسےبچالیاجائے گااورقیامت کے دن اس طرح آئے گاکہ اس پر شہیدوں کی مُہرہوگی ۔(حلیۃ الاولیا،3/181،حدیث نمبر3629)

سوال:منتشرسوچوں کا کیا نقصان ہے؟اپنی سوچوں کوکس طرح درست کیاجائے؟

جواب:جس طرح فضول بات کرنے سے بچناچاہئے ،اسی طرح فضول سوچوں سےبھی بچنا چاہئے،جس طرح گناہ والی بات سے بچناضروری ہے ،اسی طرح گناہ والی سوچوں سےبھی بچناضروری ہے ،بعض اوقات بندہ فضول سوچوں کوپال لیتاہے ،ایسانہ کیا جائے بلکہ اللہ پاک پرتوکل اوربھروسہ کرناچاہئے ،جس کی نظراللہ پاک پرہووہ فضول سوچوں سے بچارہے گا، سوچوں کا اِزالہ(یعنی ان کا نہ آنا)ممکن نہیں ،اِمالہ ہوناچاہئے یعنی سوچوں کا رُخ دوسری طرف مثلاًآخرت کے معاملات کی طرف پھیردے،قبر وآخرت کے بارےمیں سوچا جائے ،نبیِ پاک صلی اللہ علیہ والہ وسلم کے اوصاف کےبارے میں سوچا جائے تاکہ عشقِ رسول میں اضافہ ہو،گناہوں پر توبہ کرے اور ڈرتابھی رہے کہ توبہ قبول ہوگی یا نہیں ؟الحاصل اپنی سوچوں کو آخرت کی سوچوں میں بدل دیا جائے۔

منتشر ہیں خیالات کی وادیاں لُٹ گیا ہے سُکوں والیِ دوجہاں

رحم فرما دے اب تیری اُمت ہیں ہم شالا وسدا رَوَے تیرا سوھنڑا حرم

سوال:مصیبت وغم ،کرونا وائرس اوردیگربیماریاں عام ہیں ،خوف وہراس بھی پھیلاہوا ہے ،اس کیفیت میں صبرنصیب ہو جائے، کچھ مدنی پھول ارشادفرمادیں ؟

جواب:صبرجنت کے خزانوں میں سے ایک خزانہ ہے ،بلاوجہ کا خوف وہراس بھی درست نہیں، اللہ پاک کی رحمت پر نظررکھنی چاہئے۔خوف وغم آئے تو یہ دُعاکرنی چاہئے: یَا حَیُّ یَا قَیُّوْمُ بِرَحْمَتِکَ أَسْتَغِیْثُ (ترجمہ :اے زندہ ! اے قیوم ! میں تیری رحمت کے ساتھ مدد کا طلبگار ہوں) [ترمذی ،حدیث نمبر 3524]

سوال: مصیبت آپڑے تو کیاپڑھناچاہئے ؟

جواب:جب کوئی مصیبت آئے تو سو(100)مرتبہ یَاقَھَّارُپڑھناچاہئے ۔اِنْ شَاۤءَ اللہ مشکل آسان ہوگی ۔(رسالہ چالیس روحانی علاج، ص4)

سوال:جب کسی کی چوری ہوجائے تو اسےخواہ مخواہ ہرایک پر چوری کا شبہ کرنا کیسا؟

جواب:جس کی چوری ہوجائے اسے خواہ مخواہ ہرایک پر شبہ کرنےاورتہمت دھرنے سے بچناضروری ہے،فرمانِ مصطفی(صلی اللہ علیہ والہ وسلم):جس شخص کا مال چوری ہوا،وہ ہمیشہ تُہمت (لگانے)میں رہے گایہاں تک کہ وہ چورسے (بھی)بڑامُجرِم بن جائے گا۔(شعب الایمان ،۵/۲۹۷،حدیث نمبر6707)

سوال: اِس ہفتے کارِسالہ” سونے کا انڈا “ پڑھنے یاسُننے والوں کو امیرِاہلِ ِسُنّت دَامَتْ بَرَکاتُہُمُ الْعَالِیَہنے کیا دُعا دی ؟

جواب:یا اللہ پاک! جو کوئی 17صفحات کارسالہ ” سونے کا انڈا “ پڑھ یا سُن لے،اُس کو جنت الفردوس میں بے حساب داخلہ دے کراپنے پیارے حبیب صلَّی اللہ علیہ واٰلہٖ وسلَّم کا پڑوسی بنا۔اٰمِیْن بِجَاہِ النَّبِیِّ الْاَمِیْن صلَّی اللہ علیہ واٰلہٖ وسلَّم


12دسمبر کی شب عالمی مدنی مرکز فیضانِ مدینہ کراچی میں مدنی مذاکرے کا انعقاد

12دسمبر 2020ءکی شب عالمی مدنی مرکز فیضان مدینہ کراچی سے براہ راست مدنی چینل پر مدنی مذاکرے کا انعقاد کیا گیا جس میں عالمی مدنی مرکز کے گرد و نواح میں رہنے والے عاشقانِ رسول سمیت کثیر تعداد میں عاشقان رسول نے شرکت کی۔

مدنی مذاکرے میں شیخِ طریقت حضرت علامہ محمد الیاس عطار قادری دَامَتْ بَرَکَاتُہُمُ الْعَالِیَہ نے علم و حکمت سے بھرپور مدنی پھول ارشاد فرمائے۔

مدنی مذاکرے میں گفتگو کرتے ہوئے آپ نے فرمایا: جس طرح فضول بات کرنے سے بچناچاہئے ،اسی طرح فضول سوچوں سےبھی بچنا چاہئے،جس طرح گناہ والی بات سےبچناضروری ہے ،اسی طرح گناہ والی سوچوں سےبھی بچناضروری ہے ۔

انہوں نے مزید کہا کہ اللہ پاک خوشی دےمثلاًشادی ہوتو فائرنگ نہیں کرنی چاہئے،گھروں میں سوئے ہوئے بچےچونک کر اُٹھ جاتے ہوں گے ،مریض پریشان ہوتے ہوں گے، ایسی حرکتیں کرنے سے اللہ پاک کی رحمت نہیں آتی ،بلکہ گھرمیں بے سکونی آتی ہے ،ایسی باتوں سے بچنا چاہئے ۔

مدنی مذاکرے کے دیگر چند مدنی پھول بھی سوالاً جواباً ملاحظہ کیجئے

سوال:سائل(فقیر/مانگنے والے )کو کچھ نہ دینا ہوتوکن الفاظ میں منع کیا جائے؟

جواب:حُسنِ اخلاق کادامن نہیں چھوڑناچاہئے ،حکمتِ عملی سے یہ کہہ دیں" معاف کردیں

سوال:جوشبِ جمعہ (جمعرات اور جمعہ کی درمیانی رات )یا جمعہ کے دن فوت ہوتوکیا وہ عذابِ قبرسے بچ جاتاہے؟

جواب:جی ہاں!فرمانِ مصطفی(صلی اللہ علیہ والہ وسلم):جومسلمان جمعہ کے دن یا جمعہ کی رات میں مرے گا،اللہ پاک اُسے فتنۂ قبرسے بچالےگا۔ (ترمذی،2/399،حدیث نمبر1076)ایک اورحدیث پاک ہے :جوجمعہ کے دن یا جمعہ کی رات مرے گا،عذاب ِقبرسےبچالیاجائے گااورقیامت کے دن اس طرح آئے گاکہ اس پر شہیدوں کی مُہرہوگی ۔(حلیۃ الاولیا،3/181،حدیث نمبر3629)

سوال:منتشرسوچوں کا کیا نقصان ہے؟اپنی سوچوں کوکس طرح درست کیاجائے؟

جواب:جس طرح فضول بات کرنے سے بچناچاہئے ،اسی طرح فضول سوچوں سےبھی بچنا چاہئے،جس طرح گناہ والی بات سے بچناضروری ہے ،اسی طرح گناہ والی سوچوں سےبھی بچناضروری ہے ،بعض اوقات بندہ فضول سوچوں کوپال لیتاہے ،ایسانہ کیا جائے بلکہ اللہ پاک پرتوکل اوربھروسہ کرناچاہئے ،جس کی نظراللہ پاک پرہووہ فضول سوچوں سے بچارہے گا، سوچوں کا اِزالہ(یعنی ان کا نہ آنا)ممکن نہیں ،اِمالہ ہوناچاہئے یعنی سوچوں کا رُخ دوسری طرف مثلاًآخرت کے معاملات کی طرف پھیردے،قبر وآخرت کے بارےمیں سوچا جائے ،نبیِ پاک صلی اللہ علیہ والہ وسلم کے اوصاف کےبارے میں سوچا جائے تاکہ عشقِ رسول میں اضافہ ہو،گناہوں پر توبہ کرے اور ڈرتابھی رہے کہ توبہ قبول ہوگی یا نہیں ؟الحاصل اپنی سوچوں کو آخرت کی سوچوں میں بدل دیا جائے۔

منتشر ہیں خیالات کی وادیاں لُٹ گیا ہے سُکوں والیِ دوجہاں

رحم فرما دے اب تیری اُمت ہیں ہم شالا وسدا رَوَے تیرا سوھنڑا حرم

سوال:مصیبت وغم ،کرونا وائرس اوردیگربیماریاں عام ہیں ،خوف وہراس بھی پھیلاہوا ہے ،اس کیفیت میں صبرنصیب ہو جائے، کچھ مدنی پھول ارشادفرمادیں ؟

جواب:صبرجنت کے خزانوں میں سے ایک خزانہ ہے ،بلاوجہ کا خوف وہراس بھی درست نہیں، اللہ پاک کی رحمت پر نظررکھنی چاہئے۔خوف وغم آئے تو یہ دُعاکرنی چاہئے: یَا حَیُّ یَا قَیُّوْمُ بِرَحْمَتِکَ أَسْتَغِیْثُ (ترجمہ :اے زندہ ! اے قیوم ! میں تیری رحمت کے ساتھ مدد کا طلبگار ہوں) [ترمذی ،حدیث نمبر 3524]

سوال: مصیبت آپڑے تو کیاپڑھناچاہئے ؟

جواب:جب کوئی مصیبت آئے تو سو(100)مرتبہ یَاقَھَّارُپڑھناچاہئے ۔اِنْ شَاۤءَ اللہ مشکل آسان ہوگی ۔(رسالہ چالیس روحانی علاج، ص4)

سوال:جب کسی کی چوری ہوجائے تو اسےخواہ مخواہ ہرایک پر چوری کا شبہ کرنا کیسا؟

جواب:جس کی چوری ہوجائے اسے خواہ مخواہ ہرایک پر شبہ کرنےاورتہمت دھرنے سے بچناضروری ہے،فرمانِ مصطفی(صلی اللہ علیہ والہ وسلم):جس شخص کا مال چوری ہوا،وہ ہمیشہ تُہمت (لگانے)میں رہے گایہاں تک کہ وہ چورسے (بھی)بڑامُجرِم بن جائے گا۔(شعب الایمان ،۵/۲۹۷،حدیث نمبر6707)

سوال: اِس ہفتے کارِسالہ” سونے کا انڈا “ پڑھنے یاسُننے والوں کو امیرِاہلِ ِسُنّت دَامَتْ بَرَکاتُہُمُ الْعَالِیَہنے کیا دُعا دی ؟

جواب:یا اللہ پاک! جو کوئی 17صفحات کارسالہ ” سونے کا انڈا “ پڑھ یا سُن لے،اُس کو جنت الفردوس میں بے حساب داخلہ دے کراپنے پیارے حبیب صلَّی اللہ علیہ واٰلہٖ وسلَّم کا پڑوسی بنا۔اٰمِیْن بِجَاہِ النَّبِیِّ الْاَمِیْن صلَّی اللہ علیہ واٰلہٖ وسلَّم


علم کی مجلس میں حاضر ہونا ہزار رکعت نَفْل پڑھنے، ہزار جنازوں میں شرکت کرنے اور ہزار مریضوں کی عیادت کرنے سے بہتر ہے۔ مدنی مذاکرہ بھی علم دین حاصل کرنے کا بہترین ذریعہ ہے ۔

اسی سلسلے میں آج رات 8:30 بجےمدنی چینل پر براہ راست ہفتہ وار مدنی مذاکرے کا سلسلہ ہوگا جس میں بانیِ دعوتِ اسلامی حضرت علامہ محمد الیاس عطار قادری دَامَتْ بَرَکَاتُہُمُ الْعَالِیَہ عاشقانِ رسول کی جانب سے پوچھے گئے سوالات کے جوابات ارشاد فرمائیں گے۔

واضح رہے کہ مدنی مذاکرے میں امیرِ اہلِ سنت دَامَتْ بَرَکَاتُہُمُ الْعَالِیَہ فقہی سوالات کے جوابات، علم و حکمت سے لبریز مدنی پھول اور اپنے ذاتی تجربات کی روشنی میں روز مرہ کے مسائل پر تفصیلی گفتگو فرماتے ہیں۔

عاشقانِ رسول سے گزارش ہے کہ مدنی مذاکرے میں اول تا آخر شرکت فرمائیں اور علمِ دین کی روشنی سے اپنے سینوں کو منور کریں۔