خاَتَمُ النَّبیِّین کے معنی آخِرُ النبیِّین ہیں اللہ پاک  نے آپ صلی اللہ علیہ واٰلہٖ وسلم پر سلسلہ نبوت ختم فرما دی یعنی آپ صلی اللہ علیہ واٰلہٖ وسلم کے بعد کسی طرح کا کوئی نیا نبی و رسول نہ آیا ہے اور نہ ہی آ سکتا ہے یہاں تک کہ حضرت سیِّدُنا عیسیٰ علیہ السلام بھی قیامت کے نزدیک جب تشریف لائیں گے سابق و صفِ نبوت و رسالت سے متصف ہونے کے باوجود ہمارے رسول کریم صلی اللہ علیہ واٰلہٖ وسلم کے نائب و امّتی کی حیثیت سے تشریف لائیں گے اور اپنی شریعت کے بجائے دینِ محمدی کی تبلیغ کریں گے۔

عقیدہ ختمِ نُبُوّت دینِ اسلام کے بنیادی عقائد میں سے ہے یہ ایک احساس ترین عقیدہ ہے ختمِ نبوت کا انکار قرآن کا انکار ہے ختمِ نبوت کا انکار صحابہ اکرام کے اجماع کا انکار ہے ختمِ نبوت کو نہ ماننا رسول کریم صلی اللہ علیہ واٰلہٖ وسلم کے مبارک زمانہ سے لیکر آج تک کے ہر ہر مسلمان کے عقیدے کو جھوٹا کہنے کے مترادف ہے اللّٰہ کا فرمانِ عظیم ہے:

تَرجَمہ کنزُالایمان: -محمد تمہارے مردوں میں کسی کے باپ نہی ہاں اللہ کے رسول ہیں اور سب نبیوں کے پچھلے اور اللہ سب کچھ جانتا ہے(پ 22 الاحزاب: 40)

ختمِ نبوت کے منکر اس آیتِ مبارکہ کے الفاظ خَاتَمَ النَّبیِّین کے معنی میں طرح طرح کے بے بنیادی،جھوٹی اور دھوکا پر مبنی تاویلات فاسدہ کرتے ہیں جو کہ قرآن و حدیث، فرامین و اجماع صحابہ اور مفسرین،محدثین، محققین، متکلمین اور ساری امَّتِ محمَّدیہ کے خلاف ہیں - تفاسیر اور اقوال مفسرین کی روشنی میں خَاتَمُ النَّبیِّین کا معنیٰ آخِری نبی ہی ہے کثیر مفسرِین کرام نے اس آیت کی تفسیر میں ہمارے پیارے آقا محمد مصطفیٰ صلی اللہ علیہ واٰلہٖ وسلم کے آخِری نبی ہونے کی تصریح و تاکید فرمائی ہے۔

ختمِ نبوت پر فرامینِ مصطفیٰ صلی اللہ علیہ واٰلہٖ وسلم

1-بے شک میں سب نبیوں میں آخِری نبی ہوں اور میری مسجد آخِری مسجد ہے (جسے کسی نبی نے خود تعمیر کیا ہے)

2 - مجھے انبیائے کرام علیھمُ الصلٰوۃ والسلام پر چھ چیزوں سے فضیلت دی گئی ہے (مجھے جامع کلمات دئے گئے، رعب طاری کرکے میری مدد کی گئی، میرے لئے مال غنیمت کو حلال کر دیا گیا، میرے لئے ساری زمین پاک اور نماز کی جگہ بنا دی گئی،مجھے تمام مخلوق کی طرف مبعوث کیا گیا، مجھ پر نبوت ختم کر دی گئی،)

3-بے شک رسالت اور نبوت منقطع ہو چکی ہے پس میرے بعد نہ کوئی رسول ہوگا اور نہ کوئی نبی

4-میں سب سے آخری نبی ہوں تم سب سے آخری امت ہو

5-میں محمد ہوں امّی نبی ہوں تین مرتبہ ارشاد فرمایا،اور میرے بعد کوئی نبی نہی

بنی اسرائیل کا نظام ِحکومت انبیائےکرام علیھمُ الصلوۃ والسلام چلاتے تھے جب بھی ایک نبی جاتا تو اس کے بعد دوسرا نبی آتا تھا اور میرے بعد تم میں کوئی نیا نبی نہی آئےگا

7- یعنی نبوت گئی اب میرے بعد نبوت نہیں مگر بشارتیں ہیں عرض کی گئی بشارتیں کیا ? ارشاد فرمایا اچھا خواب کہ آدمی خود دیکھے یا اس کے لئے

دیکھا جائے

8-یعنی میں خَاتَمُ النَّبیِّین ہوں اور یہ بطور فخر نہی کہتا

اللّٰہ کریم ہمیں عقیدہ ختمِ نبوت کی حفاظت کرتے رہنے کی توفیق عطا فرمائے

آمین بجاہِ النَّبیِّ الامین صلی اللہ علیہ واٰلہٖ وسلم