28 جمادی الاخر, 1441 ہجری

: : :
(PST)

امیر اہلِ سنت حضرت علامہ محمد الیاس عطار قادری  دَامَتْ بَرَکَاتُہُمُ الْعَالِیَہ سے گزشتہ رات (19 جنوری 2020ءکو) ہونے والے مدنی مذاکرے میں نگرانِ شوریٰ مولانا محمد عمران عطاری مَدَّظِلُّہُ الْعَالِی نے سوال کیا کہ آپ کی مونچھیں سفید نظر آرہی ہیں ، جس سے بعض احباب کو تشویش ہورہی ہے۔خود مجھ سے بعض افراد نے اس بارے میں سوال کیا ہے۔ آپ ہی کچھ مدنی پھول ارشاد فرمادیجئے:

امیر اہلِ سنّت نے فرمایا کہ میں نے نیّت کی ہے کہ میں اپنی داڑھی مہندی نہ لگا کر سفید کرلوں ،اس میں میری کچھ اچھی اچھی نیّتیں بھی ہیں،مثلاًمیں نے مہندی لگانا شروع کی تو اہلِ محبت نے کلر لگانا شروع کردیے،جس میں کئی مسائل ہیں،ان مسائل سے بچت ہوگی،مہندی لگانے میں وقت لگتاہے،وقت کی بچت کی نیت ہے،گھر کے کسی فرد اورنگرانِ شوریٰ نے داڑھی سفیدکرنے کا کہا،ان کی دِلجوئی کی نیّت ہے۔